Baseerat Online News Portal

ڈاکٹر مشتاق احمد کمالی اخلاق و محبت کے پیکر تھے ۔ مولانا رضوی  پوکھریرا میں عظمت والدین کانفرنس سے علماء کا خطاب

 

 

 

جالے۔رفیع ساگر /بی این ایس

ڈاکٹر مشتاق احمد کمالی مرحوم اخلاق و محبت کے پیکر تھے عاجزی و انکساری اور مروت وفیاضی ان کا شیوہ تھا ۔یہ باتیں پوکھریرا میں مولانا حشمت امجدی کے والد محترم ڈاکٹر مشتاق احمد کمالی مرحوم کے گیارہواں سالانہ فاتحہ کے موقع پر منعقد ایک روزہ “عظمت والدین کانفرنس ،، سے خطاب کرتے ہوئے پیر طریقت علامہ مولانا غلام مقتدی رضوی القادری مظفرپوری خلیفہ حضور نور الاولیاء و مہتمم مدرسہ انوار مصطفے سمستی پور نے کہیں۔ بعد نماز مغرب حسین منزل پوکھریرا  میں حافظ وقاری علی کمال الدین کی تلاوت کلام پاک سے پروگرام کا آغاز ہواجس کی ی صدارت الحاج ڈاکڑ پروفیسر انجم کمالی سابق صدر شعبہ اردو و سابق پرنسپل جے، بی،ایس،ڈی،کالج کٹرہ مظفرپور اور نظامت کے فرائض ادیب شہر مولانا محبوب گوہر اسلام پوری اور قاری جاوید عالم فیضی نے انجام دئے۔ مولانا غلام مقتدی رضوی القادری نے مزید کہا کہ وہ ہر کس و ناکس کو سلام کر نے میں ہمیشہ پہل کرتے تھے یہی وجہ ہے کہ علاقہ میں عزت کی  نگاہ سے دیکھے جاتے ہیں۔ علامہ مولانا مفتی کلیم احمد مصباحی نے کہاکہ ڈاکٹر مشتاق احمد کمالی مرحوم کی ایک خوبصورت عادت یہ تھی کہ وہ ہمیشہ بڑے یا چھوٹے جو بھی سامنے آتے انھیں فورا سلام کرتے اور دوسروں کو کبھی بھی سلام کا موقع نہیں عنایت کرتے ان کی زندگی کا ایک خاص مقصد تھا کہ ہم اپنے بچوں کو تعلیم سے آراستہ کریں الحمداللہ ڈاکٹر موصوف اپنے مقصد میں پورے طور پر کامیاب نظر آرہےہیں۔ انھوں نے مزید کہا کہ ہمارے جد محترم ڈاکٹر مشتاق احمد کمالی مرحوم خلیق و ملنسار اور تواضع کے پیکر تھے ان کی سادہ زندگی سے علاقہ کے ارباب حل و عقد بے حد متاثر تھےجبکہ بارگاہ رسالت ماب میں الحاج ڈاکڑ پروفیسر انجم کمالی،منیر رضا حلیمی،دلشاد رضا سمستی پوری،مولانا سعداللہ،قاری خیابان احمد ،نورالقمرپوکھریروی،قاری معراج احمد،مشرف رضا،اختیار احمد رومی،مولانا مشاہد رضا احسانی، اشفاق احمد نے نعتوں و منقبت کا حسین گلدستہ پیش کیا۔ ڈاکٹر مشتاق احمد کمالی مرحوم کی حیات کی ایک جھلک” آینئہ حیات ” کی مفت تقسیم بھی ہوئی۔ اس موقع پرحافظ انصار احمد ،الحاج ماسٹر سلطان احمد ،مولانا وقار رضا رحمانی ،حافظ محمد شہاب الدین کے علاوہ علاقہ کے لوگوں نے  کثیر تعداد میں شریک رہے۔ اس طرح سے کانفرنس کا اختتام صلوۃ و سلام اور مولانا الحاج نور محمد مدرسہ نورالہدی کی مخصوص دعا پر ہواآخر میں ماسٹر شاہد رضا ، مولانا حشمت امجدی ، محمد افضل رضا اور محمد اکرم رضا نے لوگوں کا شکریہ ادا کیا۔

 

 

You might also like