Baseerat Online News Portal

اردو کی آبیاری ہم سب کی ذمہ داری،نثاراحمدکی کتاب کے رسم اجراکے موقع پرشرکاء کااظہارخیال

ٹمکور:یکم مارچ(پریس ریلیز)
اردو زبان آسانی سے سیکھنے پر جناب سید نثار احمد (احمد نثارؔ) صاحب نے ایک کتاب آسان اردو لکھی ہے ۔ اس کتاب کو ای بُک کی شکل میں اجراء کیا گیا۔
ایچ یم یس یونانی میڈیکل کالج، ٹمکور، کرناٹک میں وائس پرنسپل جناب ڈاکٹر مرزا شہباز بیگ صاحب کی سرپرستی اور کالج کے پرنسپل جناب ڈاکٹر ذاکر حسین، وی، صاحب کی صدارت میں یہ مجلس انعقاد پائی ، جس میں اس کتاب کا اجراء انجام پایا۔
مہمانِ خصوصی جناب اقبال احمد صاحب سیکریٹری کرناٹک کانگریس پارٹی اور سابق وقف بورڈ چیئرمن ضلع ٹمکور، اور میڈیکوز ایجوکیشنل سوسائٹی کی معتمد اور ایجوکیشنسٹ جناب ڈاکٹر محمد آصف صاحب رہے۔
آسان اردو ای بک کا اجراء جناب اقبال احمد اور جناب محمد آصف صاحبان کے ہاتھوں عمل میں آیا۔
جناب اقبال احمد صاحب نے اردو کو عام کرنے ذمہ داری پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اردو سیکھیں اور معیاری اردو سیکھیں تاکہ اردو کا ایک بہترین حلقہ تیار ہوسکے جو دینی علوم، درس و تدریس اور طب یوانی کا علمی ذخیرہ عام لوگوں تک پہنچے۔
ڈاکٹر ذاکر حسین صاحب نے اس کتاب کی اہمیت اور افادیت پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ طب یونانی کی بیش بہا علمی ذخیرہ کے تحفظ کی ذمہ داری اب یونانی سسٹم سے جڑے احباب ہی کی نہیں بلکہ دینی مدارس، اردو شعبہ و اساتذہ اور عوام الناس کی بھی ہے۔ چونکہ یہ ذخیرہ اردو میں ہے اس لئے عوام الناس اور اردو زبان سے دلچسپی رکھنے والے احباب بھی اردو سیکھ کر اس علمی خزانے کا فائدہ اٹھائیں۔ اور مبتدی حضرات کے لئے یہ کتاب میں بتایا گیا طریقہ کار آمد ثابت ہوسکتا ہے۔
جناب محمد آصف صاحب نے آسان اردو کے نسخوں کو سلیس زبان میں بتانے کی کاوش پر جناب سید نثار احمد (احمد نثارؔ) صاحب کو داد پیش کرتے ہوئے کہا کہ لسانیات پر کام ضروری ہے، اور احمد نثارؔ صاحب کی اگلی لسانی تخلیق داستانِ ابجد کو کتابی شکل میں شائع کرنے کی ذمہ داری لیتا ہوں۔ اس طرح احمد نثار صاحب کی حوصلہ افزائی کی۔

وائس پرنسپل ڈاکٹر مرزا شہباز صاحب نے اپنے خیالات پیش کرتے ہوئے کہا کہ، اردوکو زندہ رکھو تو اس کے روایات بھی زندہ رہیں گے۔ جس کے لئے اردو زبان کا سیکھنا اور سکھانا ضروری ہے۔ اردو زبان کو مشکل اور دقیق سمجھنا گویا کہ زبان کو بوجھ سمجھنے کے مترادف ہے۔ یہ تصور ذہنوں سے نکال دینا ہے کہ اردو زبان مشکل زبان ہے۔ اس کتاب کے مصنف جناب سید نثار احمد صاحب کو مبارکباد پیش کی۔
شہر پونہ کے انجنیئر اور معروف شاعر اعجاز پاشاہ اعجازؔ بگدلی صاحب نے اپنے پیغام میںمادری زبان کی اہمیت پر اپنا اظہارِ خیال کیا اور کہا کہ اب اردو طبقے کو جاگنے کا وقت آگیا ہے ، زبان کو محفوظ کرلو تاکہ تمہاری تہذیب زندہ رہ سکے۔ اردو اور اس کا ادب قوم کی میراث ہے ، جس کی حفاظت کرنا ہر خاص و عام کی ذمہ داری ہے۔ لاک ڈائون کے ایام کو خوبی کے ساتھ استعمال کرکے اردو میں تخلیقات کرنے کی روِش پر جناب سید نثار احمد (احمد نثارؔ) صاحب کو مبارکباد د پیش کیا۔
احمد نثارؔ صاحب نے اپنی اس تصنیف کے متعلق کہا کہ کوئی بھی زبان صرف بولی کی شکل میں زندہ رہے تو سمجھو کہ اس کے خاتمہ کا وقت آگیا ہے۔ تحریری زبان ہی زندہ زبان ہے۔ آسان اردو پر سینکڑوں شخصیات کام کر رہے ہیں جو کہ خوش آئند بات ہے۔ اس زمرہ میں میرا بھی شمار میرے لئے باعث افخار ہے۔ اس ای بک سے فائدہ اٹھانے کی دعوت دی، اور کہا کہ دوست احباب کے آراء کا منتظر ہوں، تاکہ اس کتا ک کو اور مزید معلومات کے ساتھ جامع شکل دی جا سکے ۔

You might also like