Baseerat Online News Portal

مہاراشٹرمیں ہاسٹل کی لڑکیوں کے زبردستی کپڑے اترواکرپولیس والوں نے کروایاڈانس

بی جے پی نے نے بتایاکلنک، ایکشن میں ادھو حکومت
ممبئی، 4 مارچ (بی این ایس )
مہاراشٹرا سے ایک شرمناک خبر سامنے آئی ہے۔ جلگاؤں کے ایک ہاسٹل میں کچھ پولیس اہلکاروں نے زبردستی ان کے کپڑے اتارنے کے بعد لڑکیوں کو ناچنے پر مجبور کیا۔ بدھ کے روز مہاراشٹر قانون ساز اسمبلی کو واقعے کے بارے میں بتایا گیا۔ حزب اختلاف کی بی جے پی کی طرف سے اٹھائے گئے اس واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ریاست کی مہاوکاس آگاڑھی حکومت نے ایک مقررہ مدت کے اندر تحقیقات کرنے کا اعلان کیا ہے۔اس واقعے کے سامنے آنے کے بعد بی جے پی کی چکھلی شویتا سے ایم ایل اے نے کہاکہ جن لڑکیوں نے پولیس کے ساتھ تعاون نہیں کیا ،ان کے کپڑے اترواکر ناچنے پر مجبور کیا گیا۔ مہالے کا مزید کہنا تھا کہ اس وقت ہاسٹل کے طلبہ خوف کے سائے میں جی رہے ہیں، انہیں خود کو محفوظ محسوس کرنا چاہئے۔ یہ واقعہ ریاست کے چہرے پر ایک داغ ہے۔ محافظ پولیس ہی لٹیری ہے۔اپوزیشن لیڈر دیویندر فڑنویس نے کہاکہ یہ ایک شرمناک واقعہ ہے۔ ایک ویڈیو کلپ میں دیکھا گیا ہے کہ پولیس والے لڑکیوں کے کپڑے اتار رہے ہیں۔ اس کی تفصیل سے تفتیش کی جانی چاہئے، ہمیں اس معاملے کو سنجیدگی سے دیکھنا چاہئے۔ اس کے علاوہ کچھ ممبران اسمبلی نے مہاویکاس آغاڑھی حکومت کو برطرف کرنے کا مطالبہ کیا، جبکہ دیگر نے ایوان میں نعرے بازی کی۔

You might also like