Baseerat Online News Portal

ایکیسویں صدی ان شإ اللہ ۔اسلام کی سربلند ی اورامت مسلمہ کی شوکت کی صدی ہوگی۔

 

 

احمدنادر القاسمی

یہ کسی نجومی اورقیافہ شناس کی پیش قیاسی نہیں ۔بلکہ ایک قلندر کے دل کااحساس اورنوید وقت ہے۔

الحمدللہ اب کمزورونحیف امت کا شعور جاگ رہاہے ۔امت نٸی نسل ایک نٸے سویرا میں آنکھیں کھولنے کو بےتاب ہے ۔مایوسی بے حسی ۔اورجہالت کا طلسم توٹنے کوہے ۔۔امن استحکام کی خوشگوار پور پھٹنے کوتیار ہے ۔آنے والاکل گزشتہ اوربیتے ہوۓ کل جیسا نہیں ہوگا ۔نوجوان وشباب کے کندھے حرکت میں آیاچاہتے ہیں ۔اسلام اورمسلمانوں کے خلاف ہونے والی عیاری مکاری ۔ظلم وناانصافی اورمنافقت کابھرم ٹوٹتا دکھاٸی دینے لگا ہے ۔دنیابھرم میں امت کی بیٹیوں اورماووں نے اپنا حجابی رنگ اورسینوں میں دفن ممتاکی قوت اورایمانی حمیت اہل جہاں پر ثابت کرناشروع کردیاہے ۔فلسطین کی ماوں کے اپنے لاڈلوں کی شہادت پر مسکراتے چہرے اورCAAتحریک کے ظلم وستم اورمکروفریب کے ایوانوں ٹکراتے فلک شگاف حجابی نعروں نے زمین کی تہیں ہلادی ہیں ۔جن کی گونج سے آج بھی لرزہ طاری ہے۔

یہ بات عیاں ہے دنیا پر ہم پھول بھی ہیں تلوار بھی ہیں۔

یہ اہل جنوں بتلاٸیں گے کیا ہم نے دیاہے عالم کو۔

گزشتہ چلیس سالوں سے امت مسلمہ اپنوں اورغیروں کے ہاتھوں زخم کھاتی رہی ۔امت کی تباہی وبربادی کی وہ داستان جو بوسنیا ہرزگوینا ۔چیچنیا ۔کویت ۔عراق۔شام۔ افغانستان اورفلسطین کی مظلومیت پر محیط ہے اورپورے خون آشام عرصہ میں کم وبیش ٦٠ لاکھ مسلمانوں کے خون سے پورا ایشیا اور شرق اوسط لہولہان ہوا اب وہ زمین پر بہنے والا لہو ایک صیح نو کو آواز دے رہاہے ۔روٸے زمین سے ظلم وبربریت کی کی بساط لپیٹی جانے والی ہے ۔وقت کے فراعنہ کاغرور اب خاک میں ملنے کوہے ۔دنیادیکھے گی اوران شإ اللہ ہم بھی دیکھیں گے ۔اللہ کے دیوانوں کےچہروں کی لکیروں سے آشکاراہے ۔آدم کی مظلوم ماووں اوربیٹیوں کے ہونٹوں کی مسکراہٹ بتارہی ہے ۔معصوم بچوں کے ۔”وتعز من تشا ٕوتذل من تشإ“ کے بول ان کے مستقبل کی تابناکیو ں کے نغموں میں تبدیل ہونے کامژدہ سنانے کو بےتاب ہے ۔زندان کے دیواروں سے بےکسوں اورلاچاروں کی آوازیں بھی فضا میں گشت کرنے لگی ہیں۔

روۓ زمین مومن اسی وقت تک کمزورزش اورہزیمت خوردہ رہتاہے ۔جب خوف ۔مایوسی ۔بزدلی دامن گیر رہتی ہے ۔اورجب یہ مرض اس کے دل ودماغ سے رخصت ہوتاہے تو اللہ کاعزت اورمددکاوعدہ قریب آجاتاہے ۔”ان العزة للہ ولرسولہ وللمومنین ۔ولکن المنافقین لایعلمون ۔۔اس کے رب کا پیغام سرگوشیاں کرتا ہے:”ولاتھنوا ولاتحزنوا وأنتم الاعلون ان کنتم مومنین ۔

اللہ اس امت مرحومہ کو دین ایمان اوریقین محکمہ کی دولت سے مالامال کرے ۔ان شا ٕ اللہ آنے والاوقت اسی شادمانی اورعزت کا پیغام وسامان لےکر لبیک کہنے کو تیار ہے ۔۔ان شاہ ٕ اللہ ۔۔طالب دعا احمدنادر القاسمی ١٣ شوال ١٤٤٢ ھ ۔مہر ٢٦ مٸی ٢٠٢١

You might also like