Baseerat Online News Portal

نیو یارک ٹائمز کا اسرائیل کے حق میں اشتہار، فلسطین حامی معروف ہستیوں پر تنقید!

واشنگٹن: امریکہ کے مشہور اخبار نیویارک ٹائمز میں شائع ہونے والے ایک اشتہار پر تنازعہ کھڑا ہو گیا ہے، جس میں فلسطین حامی ماڈلز اور پاپ اسٹار پر تبصرہ کیا گیا ہے۔ امریکی اخبار کے اس فل پیج اشتہار میں فلسطینی عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنے پر فلسطینی نژاد امریکی ماڈل بیلا حدید، ان کی بہن جی جی حدید اور برطانوی البانین پاپ اسٹار دعا لیپا پر تنقید کی گئی ہے۔ وہیں، دعا لیپا نے اشتہار میں عائد الزامات کو یکسر مسترد کر دیا ہے۔

اشتہار کی سرخی میں لکھا تھا کہ ’’بیلا، جی جی اور دعا! حماس نے دوسری نسل کشی کا اعلان کر دیا ہے۔ اب ان کی مذمت کریں۔‘‘ اشتہار کو تین نمایاں اسٹارز کے لیے ایک خط کی شکل دی گئی ہے، جسے ’ورلڈ ویلیوز نیٹ ورک‘ کے سربراہ ربی شمولی بوٹیچ نے آرگنائز اور تیار کیا ہے اور اس کے لئے ادائیگی بھی انہوں نے ہی کی ہے۔ اشتہار میں دعا لیپا اور حدید بہنوں کو ’میگا انفلوئنسرز‘ یعنی لوگوں کی بڑے پیمانے پر ذہن سازی کرنے کی قابلیت رکھنے والی قرار دیا گیا ہے۔ ان پر اسرائیل میں نسلی صفائی اور یہودی ریاست کو بدنام کرنے کے الزامات عائد کیے گئے ہیں۔

You might also like