Baseerat Online News Portal

عازمین حج کے قافلوں کی مکہ آمد، طواف قدوم کا آغاز

ملک کے مختلف شہروں سے عازمین حج کے اولین قافلے مکہ مکرمہ کے استقبالیہ مرکز پہنچنا شرع ہوگئے ہیں جبکہ جدہ سے عازمین کی آمد کا سلسلہ کل اتوار سے شروع ہوگا۔
سبق ویب سائٹ کے مطابق وزارت حج و عمرہ کے ترجمان انجینئر ہشام سعید نے کہا ہے کہ ’عازمین حج کے قافلے حرم مکی میں طواف قدوم کے لیے روانہ ہو چکے ہیں۔‘
انہوں نے کہا ہے کہ ’حرم مکی میں داخلے سے قبل النواریہ، الزایدی، الشرائع اور الہدا مراکز میں عازمین کا استقبال کیا گیا۔ وہاں سے وہ طواف قدوم کے لیے مسجد حرام کی طرف روانہ ہو رہے ہیں۔‘
’حرم مکی میں آمد سے قبل چھ ہزار عازمین پر مشتمل گروپس تشکیل دیئے گیے ہیں جو ہر تین گھنٹے بعد طواف قدوم کے لیے مسجد الحرام روانہ کئے جا رہے ہیں۔‘
واضح رہے کہ وزارت حج و عمرہ کے منصوبے کے مطابق  طواف قدوم کا پہلا مرحلہ آج ہفتے کوصبح چھ بجے شروع ہو چکا ہے۔ یہ کل یعنی 8 ذی الحجہ کو رات نو بجے تک جاری رہے گا۔
منصوبے کے مطابق وہ عازمین جو الزایدی کے مقام پر جمع ہوں گے۔ وہ الشبیکہ اسکوائر میں اکٹھے ہوں گے، بعد میں گروپ کی شکل میں حرم داخل ہوں گے۔
النواریہ مرکز پر آنے والے عازمین حج شاہ عبدالعزیز سٹیشن کے قریب جمع ہوں گے اور وہاں سے گروپ کی شکل میں حرم روانہ کئے جائیں گے۔
الشرائع مرکز میں آنے والے عازمین اجیاد الصافی سٹیشن میں جمع ہوں گے۔ النسیم مرکز میں آنے والے عازمین بھی اجیاد الصافی میں اکھٹے ہوں گے تاہم ان کی آمد ورفت کے راستے الگ الگ ہوں گے۔
ایک دن میں 48 ہزار حجاج کرام مسجد حرام کے قریب جمع ہو سکیں گے۔
طواف قدوم کی تکمیل کے بعد عازمین حج مسجد حرام سے نکلیں گے اور بسوں کے ذریعے باب علی سٹیشن سے ہوتے ہوئے جمرات پل تک جائیں گے۔
 اس موقع پر 200 بسوں کے ذریعے ایک وقت میں دو ہزار عازمین حج کو ہر تین گھنٹے کے وقفے کے بعد جمرات پل تک پہنچایا جائے گا۔
وہاں سے عازمین حج منیٰ پہنچیں گے۔ منیٰ روانگی کے لیے انہیں الگ لگ رنگوں کے ٹریکس کے ذریعے پہنچایا جائے گا۔
You might also like