Baseerat Online News Portal

کووڈ۱۹:یوپی، بہار آسام اور کشمیر سمیت ملک کی دیگر ریاستوں میں نماز عید کے اجتماع پر پابندی

نئی دہلی۔ ۲۰؍جولائی: عالمی وبا کورونا وائرس کے دوران ملک بھر کے مسلمان دوسری بار عید الاضحی کے لئے تیار ہیں۔ زیادہ تر ریاستوں میں کووڈ۔19 سے متعلق پابندیاں ہیں۔ مختلف ریاستیں عید الاضحیٰ 2021 کے لیے رہنما اصول جاری کررہی ہیں۔ کچھ ریاستوں میں اجتماعی نمازوں پر پابندی عائد ہیں۔جموں وکشمیر میں اس سال بھی عیدالاضحیٰ کی تقریبات میں کووڈ 19 کا سایہ نظر آئے گا۔ جب مرکز کے زیرانتظام علاقہ میں بڑے پیمانے پر مجمع کو 25 افراد تک محدود کردیا ہے۔ کشمیر میں تیسری کووڈ لہر کے خطرہ کے درمیان کسی بھی اجتماعی نماز یا عبادت کی اجازت نہیں ہوگی۔اترپردیش کی حکومت نے 21 جولائی 2021 کو ہونے والے عید الاضحیٰ کی تقریبات کے لئے اجتماعات پر پابندی عائد کردی ہے۔ سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ نے ہدایت دی ہےکہ ایک وقت میں کسی بھی مقام پر 50 سے زیادہ افراد جمع نہ ہوں۔ یہ فیصلہ کورونا کی موجودہ صورتحال کے پیش نظر کیا گیا ہے۔سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ نے مزید کہا کہ عوامی مقامات پر جانوروں کی قربانی نہیں دی جانی چاہئے۔ اس کے لئے مخصوص مقامات پر ہی قربانی کا انتظام کرنا چاہئے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ کسی بھی رسم کو انجام دینے کے لئے ممنوعہ جانوروں جیسے گائے اور اونٹوں کو ذبح نہ کیا جائے۔بہار میں وقف بورڈ نے ایک سرکلر جاری کیا اور مساجد انتظامیہ سے کہا کہ وہ ریاستوں میں بقرعید کے جشن کے لئے اجتماعی نماز ادا نہ کریں کیونکہ ابھی تک ریاستی حکومت کی طرف سے جاری کردہ رہنما خطوط نہیں ہیں۔آسام حکومت نے نیا ایس او پی جاری کیا۔ جورھاٹ ، گولاگھاٹ ، بسوآناتھ ، سونت پور ، لکھیم پور میں پوری طرح سے قابو پایا جاتا ہے۔ ماریگاؤں ، گولپارہ میں کرفیو میں ایک بجے تک نرمی کا اعلان کیا۔ گوہاٹی میں کرفیو کے وقت میں کوئی تبدیلی نہیں۔ دیگر 26 اضلاع میں بھی کرفیو میں شام 5 بجے تک نرمی ہے۔نئے ایس او پی کے مطابق تمام ہوائی جہاز اور ریلوے مسافروں کو کووڈ۔19 ٹیسٹ کرانا ہوگا۔ مزید برآں شمال مشرقی ریاستوں میں سفر کرنے والے مسافروں کو بھی اس پروٹوکول پر عمل پیرا ہونا پڑے گا۔ عید کی خوشی کے دوران صرف 5 افراد کو مساجد میں اپنی رسومات ادا کرنے کے لئے جمع ہونے کی اجازت ہے۔دہلی میں بقرعید 2021 کے موقع پر جامع مسجد میں اجتماعی نماز نہیں ہوگی۔ لیکن ایس او پی کے ساتھ اجتماعی نماز کی اجازت ہے جس کی پیروی کی جانی چاہئے۔ مذہبی رہنماؤں نے مسلمانوں سے اپیل کی کہ وہ کووڈ 19 پروٹوکول پر عمل کریں۔کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کے لئے راجستھان حکومت نے جمعہ کے روز عید الاضحیٰ کے موقع پر بڑے پیمانے پر اجتماعات پر پابندی کا اعلان کرتے ہوئے تازہ رہنما خطوط جاری کیے۔ راجستھان حکومت نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ احتیاطی تدابیر اختیار کریں اور کووڈ 19 پروٹوکول پر عمل کریں۔ جہاں تک ممکن ہو۔ گھر پر ہی رہیں اور کنبہ کے افراد کے ساتھ نماز پڑھیں۔مہاراشٹر حکومت نے مسلمانوں سے صرف گھر پر ہی بقرعید منانے کو کہا ہے۔ تہوار سے قبل مہاراشٹرا حکومت کے جاری کردہ رہنما خطوط پر مہاراشٹرا کی حکومت نے لوگوں سے کہا ہے کہ وہ گھروں میں نماز ادا کریں کیونکہ کووڈ۔19 کی پابندیوں کے سبب مذہبی مقامات کو بند کردیا گیا ہے۔ مساجد یا عیدگاہوں میں نمازوں کی اجازت نہیں ہوگی۔

You might also like