Baseerat Online News Portal

اب میزورم سے آسام میں داخل ہونے والی تمام گاڑیوں کی ہوگی جانچ

لوگوں نے سوشل میڈیا پر درد کاکیا اظہار
نئی دہلی،30؍جولائی (بی این ایس )
آسام حکومت نے ایک نوٹیفکیشن میں کہا کہ میزورم سے آسام میں داخل ہونے والی تمام گاڑیوں کو’ممنوعہ ادویات‘ کے لیے جانچ کیا جائے گا۔ حکومت آسام نے یہ نوٹیفکیشن جاری کیا ہے۔ واضح رہے کہ کچھ دن پہلے ہی دو پولیس فورس کے درمیان ہوئے تصادم میں آسام پولیس کے چھ اہلکار مارے گئے تھے۔ اس نوٹیفکیشن سے پہلے آسام حکومت نے شہریوں کو مشورہ دیا تھا کہ وہ سیکورٹی کے خطرے کے پیش نظر میزورم کا سفر نہ کریں۔گاڑیوں کی جانچ کے اقدام کو جائز قرار دیتے ہوئے آسام حکومت نے کہا کہ دو ماہ کے اندر 912 مقدمات درج کیے گئے ہیں اور 1560 افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔ ممنوعہ منشیات کی بھاری مقدار ضبط کی گئی ہے۔ آسام پولیس کے ایک سینئر عہدیدار جی پی سنگھ نے ایک ٹویٹ میں کہا کہ حکومت میزورم سے اور اس کے آس پاس کام کرنے والے منشیات کے نیٹ ورک کے خلاف اپنا جارحانہ موقف برقرار رکھے ہوئے ہے۔ لوگوں سے تعاون کی اپیل کر رہی ہے۔آسام حکومت کی طرف سے جاری کردہ حکم میں کہا گیا ہے کہ غیر قانونی ادویات کے خلاف مہم کے دوران پتہ چلا کہ زیادہ تر معاملات میزورم سے ہی سرحد پار سے کئے جا رہے ہیں۔ میزورم کے ذریعے غیر قانونی منشیات کی اسمگلنگ معاشرے کے لیے ایک بڑی تشویش اور خطرہ ہے۔ غیر قانونی ادویات کی اسمگلنگ کو روکنے کے لیے میزورم سے آسام میں داخل ہونے والی تمام گاڑیوں کو چیک کرنا ضروری ہے۔ آسام پولیس اہلکاروں کی طرف سے تمام آسام میزورم سرحدوں پر گاڑیوں کی مکمل جانچ کی جائے گی۔ گاڑیاں تب ہی جاری کی جائیں گی جب متعلقہ افسر مطمئن ہو جائیں گے کہ اس میں کوئی ممنوعہ ادویات نہیں ہیں۔اگرچہ آسام کے تازہ ترین اقدام پر میزورم حکومت کی طرف سے کوئی باضابطہ ردعمل سامنے نہیں آیا ہے، میزورم میں سوشل میڈیا صارفین نے دعویٰ کیا ہے کہ اس اقدام کا مقصد میزورم کے لوگوں پر ظلم کرنا ہے، جو ملک کے دیگر حصوں میں آسام کی سڑکوں کے ذریعہ ہی پہنچ سکتے ہیں۔

You might also like