Baseerat Online News Portal

سپریم کورٹ نے دھنباد میں جج کی مشتبہ موت کا ازخود نوٹس لیا، ڈی جی پی سے رپورٹ طلب

نئی دہلی،30؍جولائی (بی این ایس )
سپریم کورٹ نے جھارکھنڈ کے دھنباد میں ایک جج کی مشتبہ موت کا ازخود نوٹس لیا ہے۔ سی جے آئی این وی رامنا اور جسٹس سوریہ کانت کی بنچ نے ایک ہفتے میں چیف سیکریٹری اور جھارکھنڈ کے ڈی جی پی سے رپورٹ طلب کی ہے۔ عدالت نے کہا ہے کہ ملک بھر میں عدالتی افسران پر حملوں کے کئی واقعات ہوئے ہیں۔ ہم ان کی حفاظت کے وسیع موضوع پرسماعت کریںگے۔ جھارکھنڈ ہائی کورٹ دھنباد جج کے مبینہ قتل کی تحقیقات کی نگرانی کرتا رہے گا۔دھنباد ڈسٹرکٹ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ جج (اے ڈی جے) آنند اتم بدھ کے روز ایک گاڑی کی زد میں آکر ہلاک ہوگئے جب وہ دھنباد میں مجسٹریٹ کالونی کے قریب صبح کی سیر کر رہے تھے۔ انہیں اسپتال میں داخل کرایا گیا، جہاں علاج کے دوران ان کی موت ہوگئی۔ بعد میں سی سی ٹی وی فوٹیج سے پتہ چلا کہ ایک آٹو رکشہ نے جان بوجھ کر جج کو ٹکر ماری ہے۔آٹو رکشہ ڈرائیور لکھن ورما اور اس کے ساتھی راہل ورما سمیت دو افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔ ڈرائیور نے مبینہ طور پر اعتراف کیا ہے کہ اس نے جج کو گاڑی سے ٹکرماری ہے ۔

You might also like