Baseerat Online News Portal

خودکشی کرلے کووڈ مریض تو کورونا سے موت کا سرٹیفکیٹ دینے پر غور کرے حکومت: سپریم کورٹ

نئی دہلی، 14 ستمبر (بی این ایس )
سپریم کورٹ نے مرکزی حکومت سے کہا ہے کہ وہ کوویڈ ڈیتھ سرٹیفکیٹ کے حوالے سے جاری ہدایات میں اس حقیقت پر غور کرے جس میں کوویڈ متاثرہ کی خودکشی کے معاملے کو کووڈ موت کے زمرے میں نہیں رکھا گیا ہے۔ سپریم کورٹ نے مرکزی حکومت سے کہا ہے کہ وہ اس معاملے میں اپنے فیصلے پر نظر ثانی کرے۔ سپریم کورٹ میں مرکزی حکومت نے حال ہی میں کہا کہ آئی سی ایم آر اور وزارت صحت نے کووڈ سے متعلق موت کے معاملے میں موت سرٹیفکیٹ جاری کرنے سے متعلق ہدایات جاری کی ہیں۔ ہدایات میں کووڈ سے موت قراردینے کی ایک شرط یہ ہے کہ اگر موت زہر، خودکشی یا حادثے کی وجہ سے ہوئی ہے تو اسے کووڈ کی وجہ سے موت نہیں سمجھا جائے گا، چاہے اس شخص کا کوویڈ ٹیسٹ مثبت ہو۔ پیر کو سپریم کورٹ کے جسٹس ایم آر شاہ کی سربراہی میں بنچ نے ان رہنما خطوط پر غور کیا اور کہا کہ ہدایات کووڈ موت سرٹیفکیٹ کے اجرا کے عمل کو آسان بنانے کیلئے جاری کی گئی ہیں۔ اس میں کہا گیا ہے کہ اگر کووڈ کا شکار زہر یا حادثہ یا خودکشی سے مر جاتا ہے تو اسے کوویڈ موت نہیں سمجھا جائے گا۔ عدالت نے کہا کہ پہلی نظر میں کسی کوویڈ مریض کے خودکشی کیس کو کوڈ کی موت سے باہر رکھنا قابل قبول نہیں لگتا۔ ایسی صورتحال میں حکومت کو اس پر غور کرنا چاہیے۔

You might also like