Baseerat Online News Portal

خانقاہ مجیبیہ کے حضور زیب سجادہ سے امارت شرعیہ کے امیر شریعت کی ملاقات ٭اللہ کی نصرت آپ کے شامل حال ہو: زیب سجادہ ٭آپسی مشوروں سے امارت کے کام کو آگے بڑھایا جائے گا: امیر شریعت ثامن

پٹنہ 11اکتوبر 2021 (پریس ریلیز)

امارت شرعیہ پھلواری شریف پٹنہ کے امیر شریعت حضرت مولانا احمد ولی فیصل رحمانی کے آج خانقاہ مجیبیہ پہنچنے پر مولانا سید شاہ منہاج الدین قادری ودیگر کارکنان کے ذریعہ پرتپاک خیر مقدم کیا گیا۔ خانقاہ مجیبیہ کے زیب سجادہ حضرت شاہ آیت اللہ قادری مدظلہ العالی نے اپنے حجرہ مبارک میں امیر شریعت کا استقبال کرتے ہوئے اپنے دست مبارک سے حضرت امیر شریعت ثامن کے سر پر شماغ (رومال)رکھا اور عطر پیش فرمایا۔ اپنے پاس بٹھا کر حضور زیب سجادہ نے فرمایا کہ یہ رشتہ دل کا ہے۔ حضرت قطب عالم مولانا محمد مونگیریؒ بھی خانقاہ مجیبیہ آیا کرتے تھے اور قیام بھی فرماتے تھے، امیر شریعت رابع مولانا منت اللہ رحمانی علیہ الرحمہ کا بھی یہاں اکثر آنا ہوتا تھا۔ حضور زیب سجادہ نے فرمایا کہ والد صاحب علیہ الرحمہ سے امارت شرعیہ کے سابق امرائ بالخصوص حضرت امیر شریعت رابع اور امیر شریعت سابع مولانا محمد ولی رحمانی علیہ الرحمہ سے گہرے مراسم تھے۔ آپ کے امارتِ شرعیہ کے آٹھویں امیر منتخب ہونے سے مجھے بے پناہ قلبی مسرت ہوئی ہے، دل کی گہرائیوں سے دعا دیتا ہوں کہ اللہ تعالیٰ اس امانت کو بہتر طریقے سے ادا کرنے کی آپ کو توفیق عطا فرمائے اور اللہ کی نصرت شامل حال ہو، آپ سے ملاقات کرکے خانقاہ مجیبیہ، امارت شرعیہ اور خانقاہ رحمانی کے دیرینہ روایت کی یاد بھی تازہ ہوگئی میں آپ کو بہتر مستقبل کی دعا بھی دے رہا ہوں۔ اس موقع سے امیر شریعت ثامن حضرت مولانا احمد ولی فیصل رحمانی سجادہ نشین خانقاہ رحمانی مونگیر نے بھی خانقاہ مجیبیہ امارت شرعیہ اور خانقاہ رحمانی کے درمیان دیرینہ تعلقات کا اور بہتر خانقاہی روابط کا ذکر فرمایا، امیر شریعت ثامن نے فرمایا کہ ان شائ اللہ خانقاہ مجیبیہ، میں میری حاضری بار بار ہوگی۔ ملی کاموں کے انجام دہی میں حضرت زیب سجادہ کے مشورے سے بھی استفادہ کیا جائے گا، امارت شرعیہ کے استحکام میں آپ کی دعاؤں اور مشوروں کی ضرورت آج بھی ہے اور کل بھی رہے گی۔ اس کے علاوہ خلوت میں بھی حضرت زیب سجادہ خانقاہ مجیبیہ اور امیر شریعت ثامن کے درمیان گفتگو ہوئی۔ حضرت امیر شریعت ثامن حضور زیب سجادہ خانقاہ مجیبیہ کے اخلاق سے کافی متأثر نظر آئے۔

واضح رہے کہ حضرت زیبِ سجادہ سے ملاقات سے قبل حضرت امیر شریعت ثامن نے مولانا سید شاہ منہاج الدین قادری کی معیت میں سجادگان خانقاہ مجیبیہ کے مزارات پر حاضر ہوکر فاتحہ خوانی کی، بالخصوص تاج العارفین حضرت سید شاہ مجیب اللہ قادری نور اللہ مرقدہ کے قبر مبارک پر حاضر ہوکر فاتحہ خوانی کی، اُس کے بعد خانقاہ مجیبیہ کے سابق سجادگان اور امارت شرعیہ کے امیر شریعت اول بدر الکاملین حضرت مولانا سید شاہ بدر الدین قادری نور اللہ مرقدہ، امیر شریعت ثانی محی الملۃ والدین حضرت سید شاہ محی الدین قادری نور اللہ مرقدہ اور امیر شریعت ثالث حضرت سید شاہ قمر الدین قادری ودیگر سجادگان وبزرگان کے مزار پر بھی فاتحہ خوانی کا شرف حاصل کیا۔ مزید برآں بانی امارت شرعیہ حضرت مولانا ابو المحاسن محمد سجاد صاحب نور اللہ مرقدہ کے قبر مبارک پر بھی فاتحہ پڑھنے کا شرف حاصل کیا۔ جو کہ وہیں باغ مجیبی قبرستان میں آسودۂ خواب ہیں۔

حضرت امیر شریعت ثامن نے اس ملاقات کو ایک خوشگوار اور یادگار لمحہ قرار دیا۔ اور اِس بات کا عندیہ دیا کہ ان شاء اللہ یہ حاضری مستقبل میں بار بار ہوگی اور امارت کے امور کو ان شائ اللہ حضرت زیب سجادہ خانقاہ مجیبیہ کے مشورہ سے اور بہتر کیا جائے گا۔ امیر شریعت ثامن کے ساتھ اِس موقع پر نائب امیر شریعت حضرت مولانا محمد شمشاد رحمانی قاسمی، قائم مقام ناظم مولانا شبلی القاسمی اور حضرت امیر شریعت سابع مفکر اسلام مولانا محمد ولی صاحب رحمانی کے چھوٹے صاحبزادے جناب فہد رحمانی ودیگر حضرات نے بھی حاضری کا شرف حاصل کیا۔

You might also like