Baseerat Online News Portal

پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں پھر ہواا ضافہ، عام آدمی کی بڑھتی جا رہی ہیں مشکلیں

نئی دہلی(بی این ایس)دو دن کے وقفے کے بعد پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں آج پھر اضافہ ہوا ہے۔ اس سے قبل منگل اور بدھ کو تیل کی قیمتوں میں اضافہ نہیں ہوا تھا۔ آج راجدھانی دہلی میں پٹرول اور ڈیزل دونوں کی قیمت میں پینتیس ۔پینتیس پیسے فی لیٹر کا اضافہ ہوا ہے۔ قیمت میں اضافے کے بعد آج دہلی میں پٹرول ایک سوچار روپئے اناسی پیسے فی لیٹر فروخت کیا جا رہا ہے جبکہ ڈیزل کی قیمت ترانوے روپئے چون پیسے فی لیٹر ہے۔ ممبئی میں پٹرول کی قیمت ایک سو دس روپئے پچہتر پیسے فی لیٹر اور ڈیزل کی قیمت ایک سو ایک روپئے چالیس پیسے فی لیٹر ہے۔
بین الاقوامی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں مسلسل اضافے اور ڈالر کے مقابلے میں روپئے کی قدر میں کمی کے باعث ملک میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں لگنے والی آگ تھمنے کا نام نہیں لے رہی ہیں۔
پٹرول اور ڈیزل کی قیمت میں آج 35 ۔ 35 پیسے فی لیٹر اضافہ کیا گیا ہے۔ جس کے بعد قومی راجدھانی دہلی میں پٹرول 104.79 روپے فی لیٹر جبکہ ڈیزل 93.52 روپے فی لیٹر ہو گیا ہے۔

چار بڑے شہروں میں پٹرول۔ڈیزل کی قیمتیں
دہلی پٹرول 104.79 روپے اور ڈیزل 93.52 روپے فی لیٹر۔
> ممبئی پٹرول 110.75 روپے اور ڈیزل 101.40 روپے فی لیٹر۔
> چنئی پٹرول 102.10 روپے اور ڈیزل 97.93 روپے فی لیٹر۔
> کولکتہ پٹرول 105.43 روپے اور ڈیزل 96.63 روپے فی لیٹر۔
اکتوبر ماہ کے ابتدائی 10 دنوں میں ہی پٹرول کی قیمت میں 2.80 روپئے کا اضافہ ہوگیا ہے۔ وہیں ڈیژل کی قیمتوں میں 3.30 روپئے کا اضافہ کیا جاچکا ہے۔ ملک کے بیشتر بڑے شہروں میں پٹرول کی قیمت 100 روپے فی لیٹر سے تجاوز کرچکی ہے اور ڈیزل بھی سنچری کی طرف بڑھ رہا ہے۔

ان ریاستوں میں 100 کے پار پٹرول:
مدھیہ پردیش، راجستھان، مہاراشٹر، آندھرا پردیش، تلنگانہ، کرناٹک، اوڈیشہ،بہار، جموں وکشمیر اور لداخ میں پٹرول کی قیمتیں 100 روپئے پار ہوچکی ہیں۔ ممبئی میں پٹرول کی قیمت سب سے زیادہ ہے۔
واضح رہے کہ ریاستوں میں پٹرول اور ڈیژل کی قیمت میں فرق مرکز اور ریاستی حکومت کے ذریعہ لگائے ٹیکس اور ڈھلائی کی قیمت کی وجہ سے الگ الگ ہوتا ہے۔

You might also like