Baseerat Online News Portal

علی گنج بازار گولیوں کی تھڑاہٹ سے گونج اٹھا۔

 

جموئی علی گنج/بی این ایس

محمد سلطان اختر۔

 

جموئی ضلع کے تحت اسلام نگر بلاک کے علی گنج بازار کے قریب درکھا گاؤں کے جدید مکھیا نمائندے جئے پرکاش مہتوبن سہدیو مہتو عُمر 40 سال کو شام 4:30 بجے گولیوں سے بھون دیا گیا جس کی وجہ سے دو یا تین گولیاں ان کے جسم میں لگیں۔ اور ان کی حالت بگڑ گئی، بگڑتے ہوئے حالت کو دیکھتے ہوئے اسے ابتدائی طبی مرکز علی گنج لایا گیا، جہاں ڈاکٹروں اور کمپاؤنڈر نے اس کا ابتدائی علاج کیا۔ جس میں ڈاکٹر عبدالخالق نعمانی نے پیش قدمی دکھائی اور علاج کیا مگر ان کی حالت تشویشناک تھی اور یہاں زیادہ سہولیات نہ ہونے کی وجہ کر انہیں جلد جموئی لے جانے کا مشورہ دیا۔ پھر اسے جموئی ریفر کر دیا گیا۔ خبر لکھے جانے تک ایمبولینس جموئی جانے کے لئے پہنچ چکی تھی اور جموئی کے لیے روانہ ہو رہی تھی۔لیکِن سوال یہ اٹھتا ہے کہ کس نے فائرنگ کی؟ گولی کیسے چلی؟ کیوں چلی؟

پورے معاملے کی تفتیش جاری ہے۔ پولیس تفتیش میں مصروف ہے۔ ذرائع کی مانیں تو جموئی ضلع کے علی گنج اور سکندرہ ان دونوں بلاکوں میں اس قسم کے واقعات عام طور پر پیش آتے رہتے ہیں۔ آخر کیوں؟ سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ انتظامیہ ایسے شرپسندوں کے ہاتھوں مجبور کیوں ہے؟ ایسے شرپسندوں کی نشاندہی کرکے انہیں سلاخوں کے پیچھے کیوں نہیں ڈالتی؟ آخر ان شرپسندوں کو کس کی پشت پناہی حاصل ہے کہ ایسا واقعہ دن دیہاڑے کر رہا ہے اور ہمیشہ کرتے رہتا ہے۔

You might also like