Baseerat Online News Portal

سری لنکا بحران: وزیر اعظم مہندا راجا پاکسے مستعفی، پرتشدد تصادم کے بعد کرفیو نافذ

آن لائن نیوزڈیسک
سری لنکا کے وزیر اعظم مہندا راجا پاکسے نے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ مقامی میڈیا کے مطابق مہندا راجا پاکسے نے یہ فیصلہ دارالحکومت کولمبو میں پرتشدد مظاہروں کے درمیان کیا ہے۔ سری لنکا میں صدر گوتابایا راجا پاکسے کی جانب سے دوسری بار ایمرجنسی نافذ کیے جانے کے بعد ملک کے کئی حصوں میں مظاہرے ہو رہے ہیں۔ پیر کو حکومت کے حامیوں نے ان مظاہرین پر حملہ کیا جو راشٹرپتی بھون کے باہر دھرنا دے رہے تھے۔
اس سے قبل گزشتہ روز پولیس نے سری لنکا کے دارالحکومت میں کرفیو نافذ کر دیا تھا جو شدید معاشی بحران کا شکار ہے۔یہ کرفیو پیر کو حکومت کے حامیوں اور مخالفین کے درمیان جھڑپوں کے بعد لگایا گیا تھا۔
مظاہرین صدر گوتابایا راجا پاکشے کے استعفے کا مطالبہ کر رہے تھے۔ ان جھڑپوں میں کم از کم 20 زخمی ہوئے ہیں۔ اے ایف پی نے حکام کے حوالے سے بتایا کہ راجا پاکسے کے حامیوں نے 9 اپریل کو صدارتی محل کے باہر بیٹھے غیر مسلح مظاہرین پر لاٹھیوں اور ڈنڈوں سے حملہ کیا۔
اس سے قبل ہفتے کے روز یہ خبر سامنے آئی تھی کہ معاشی بحران کا سامنا کرنے والے سری لنکا میں نافذ ایمرجنسی کے درمیان وزیر اعظم مہندا راجا پاکسے مستعفی ہو سکتے ہیں۔ اگر ذرائع پر یقین کیا جائے تو وزیر اعظم نے صدر گوٹابایا راجا پاکسے کی درخواست پر مثبت موقف اختیار کیا تھا، جس میں انہیں ملک میں گہرے ہوتے معاشی بحران کے درمیان مستعفی ہونے کو کہا گیا تھا۔ اس کے ساتھ انہوں نے ملک میں ایمرجنسی کے نفاذ کو بھی درست سمجھا۔
درحقیقت، 4 مئی کو سری لنکا کی مرکزی اپوزیشن پارٹی نے وزیر اعظم مہندا راجا پاکشے اور ان کی کابینہ کے خلاف تحریک عدم اعتماد جاری کی تھی۔ اپوزیشن کا الزام ہے کہ جب ملک اپنے بدترین معاشی بحران سے گزر رہا ہے، راجا پاکسے نے اپنی آئینی ذمہ داریوں کو پورا نہیں کیا۔ سری لنکا کی مرکزی اپوزیشن SJB نے منگل کو SLPP مخلوط حکومت اور صدر Gotabaya Rajapaksa کے خلاف پارلیمنٹ کے سپیکر کو تحریک عدم اعتماد پیش کی۔ دوسری جانب حکومت نے نئے آئین کی تجویز پر غور کرنے کے مقصد سے کابینہ کی ذیلی کمیٹی کے قیام کا اعلان کردیا۔
سماگی جنا بالویگیا (ایس جے بی) کے جنرل سکریٹری رنجیت مددوما بندارا نے کہا تھا، ’’ہم نے (پارلیمنٹ) اسپیکر سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی اور ان کے سامنے دو تحریک عدم اعتماد پیش کی۔ ایک آئین کے آرٹیکل 42 کے تحت صدر کے خلاف اور دوسرا حکومت کے خلاف۔

You might also like