Baseerat Online News Portal

سابق ایم یل سی حاجی اقبال کا بیٹا گرفتار

گینگسٹر کے تحت فرار چل رہے علی شان کو دہلی سے کیاگیا گرفتار
دیوبند،13؍ مئی(سمیر چودھری؍بی این ایس)
گینگسٹر ایکٹ میں مطلوب سہارنپور کے سابق ایم ایل سی حاجی اقبال کے بیٹے کو دہلی کے لاجپت نگر سے گرفتار کیا گیا ہے۔ بہٹ پولیس اور کرائم برانچ نے جمعرات کی رات کان کنی مافیا حاجی اقبال کے بیٹے علی شان کو گرفتار کیا، وہ اس وقت بہٹ کوتوالی میں ہے۔ سہارنپور کی بہٹ پولس نے گینگسٹر ایکٹ کے تحت غریبوں سے دھوکہ دہی اور زمین ہتھیانے کے معاملے میں یہ کارروائی کی ہے۔اس معاملے میں یہ تیسری گرفتاری ہے۔ تاہم حاجی اقبال، ان کے بیٹے جاوید، واجد اور افضل تاحال مفرور ہیں۔ اس سے قبل معاون سابق بلاک پرمکھ راؤ لئیق، نوکر نسیم کی گرفتاری عمل میں آچکی ہے۔ راؤ لئیق کو عدالت سے ضمانت مل گئی ہے۔ کوتوالی بہٹ کے انسپکٹر برجیش کمار پانڈے اس معاملے کی جانچ کر رہے ہیں۔ایس پی دیہات سورج رائے نے بتایا کہ علی شان کو بہٹ پولیس اور سرویلنس ٹیم نے گرفتار کیا ہے۔ اسے رات دو بجے کے قریب لاجپت نگر سے گرفتار کیا گیا۔ اس کے قبضے سے ایک فارچیونر گاڑی بھی برآمد ہوئی ہے۔واضح رہے کہ بی ایس پی کے سابق ایم ایل سی حاجی اقبال اور ان کے بھائی سابق ایم ایل سی محمود علی سمیت چار لوگوں کے خلاف مرزا پور پولیس اسٹیشن میں رپورٹ درج کی گئی تھی۔ یہ رپورٹ جعلسازی اور دھوکہ دہی کی دفعات کے تحت درج کی گئی تھی۔ رپورٹ ان کے سابق ساتھی امت جین عرف دادو نے درج کرائی ہے۔ حال ہی میں ایس ایس پی آکاش تومر کی جانب سے کی گئی تحقیقات میں حاجی اقبال کے منشی نسیم اور ان کے بیٹے کے نام پر کروڑوں روپے کی جائیدادیں پائی گئیں۔ ڈی ایم اکھلیش سنگھ نے ان جائیدادوں کو قرق کرنے کا حکم دیا تھا۔ جس کے بعد محکمہ ریونیو اور پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے ان تمام جائیدادوں کو قرق کر لیا۔

You might also like