Baseerat Online News Portal

جس ٹوئٹر اکائونٹ کی وجہ سے زبیر کی گرفتاری ہوئی وہ اکاؤنٹ ٹوئٹر سے غائب

 

نئی دہلی۔۳۰؍ جون: آلٹ نیوز کے شریک بانی محمد زبیر کے خلاف شکایت کرنے والا دہلی پولیس کا ٹوئٹر اکاؤنٹ اس پلیٹ فارم سے غائب ہو گیا ہے۔ ٹوئٹر اکاؤنٹ کے صارف کا نام ہنومان بھکت تھا اور اس نے شکایت درج کروائی تھی کہ محمد زبیر نے بھگوان کی توہین کرکے ان کے جذبات کو ٹھیس پہنچائی ہے۔زبیر کو دہلی پولیس نے فسادات بھڑکانے اور مذہبی جذبات کو مشتعل کرنے کے الزام میں گرفتار کیا تھا۔زبیر نے 1983میں بنی ایک فلم کے ایک شاٹ کو 2018میں ٹوئٹر پر پوسٹ کیا تھا۔ اس میں ایک فوٹو بھی جس میں لگے ایک بورڈ پر ہنی مون ہوٹل لکھا تھا اور اسے پینٹ کرنے کے بعد ہنومان ہوٹل کردیا گیا تھا۔یہ شکایت @balajikijaiin کی آئی ڈی والے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے کی گئی تھی لیکن اب یہ اکاؤنٹ وجود میں نہیں ہے ۔زبیر کی گرفتاری کے دن اس ٹویٹر اکاؤنٹ سے صرف ایک ٹویٹ ہوئی تھی اور اس کا صرف ایک فالوور تھا اور چند ہی دنوں میں اس کے 1200 فالوورز ہو گئے۔ لیکن بدھ کو یہ اکاؤنٹ ڈیلیٹ کر دیا گیا۔پولیس نے کہا ہے کہ اس نے ابھی تک اس معاملے میں شکایت کنندہ سے رابطہ نہیں کیا ہے۔ایک پولیس افسر نے انڈین ایکسپریس کو بتایا کہ اگرچہ اکاؤنٹ کو ڈیلیٹ کر دیا گیا ہے، لیکن اس سے تفتیش پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔ انہوں نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر کہا کہ پولیس اس بات کی تحقیقات کر رہی ہے کہ آیا زبیر کی ٹوئٹ مبالغہ آرائی اور بدامنی کا باعث تھی۔ انہوں نے کہا کہ پولیس شکایت کرنے والے شخص کا پتہ لگانے کی کوشش کر رہی ہے اور اس سے اس کی شکایت کے بارے میں پوچھ گچھ کرے گی۔پولیس افسر کا کہنا تھا کہ ممکن ہے کہ اس نے خوف کی وجہ سے اکاؤنٹ ڈیلیٹ کر دیا ہو۔

You might also like