Baseerat Online News Portal

ہندوستان سے ایک سال کی ٹریننگ کے بعدبالآخرافغان فوجی وطن واپس لوٹے

نئی دہلی؍ کابل۔ یکم؍اگست: نئی دہلی؍کابل،یکم اگست-افغان فوجی کیڈٹ جنہوں نے انڈین ملٹری اکیڈمی دہرادون سے اپنی ٹریننگ حاصل کی بالآخر ایک سال کے بعد اپنے وطن واپس پہنچ گئے۔ان کو وطن جانے میں بہت دشواریاں آئی تھی اور طالبان حکومت اوراس کے اتحادی انہیں واپس لینے میں شش وپنج میں مبتلا تھے۔25کیڈٹوں نے پچھلے سال اپنی ٹریننگ مکمل کرلی لیکن اس کے فورا بعد امریکہ نے جنگ زدہ افغانستان سے اپنے فوجیوں کا انخلاء کیا اور طالبان کی حکومت عمل میں آئی۔جب وہ واپس آئے تو ان کا ہوائی اڈے پر خیرمقدم کیا گیا۔ان کا واپس جانا اس وجہ سے ممکن ہوا کہ افغانستان کے وزارت دفاع نے کابل میں ہندوستانی سفارت خانے استدعا کی کہ انہیں کیڈٹوں کے ساتھ براہ راست بات کرنے کا موقع دینا چاہیے۔ اور اس ضمن میں ہندوستان کے وزارت خارجہ نے افغانستان وزارت داخلہ اور کیڈٹوں کے درمیان ملاقات کا اہتمام کیا۔وزیردفاع ملا یعقوب نے ذاتی طورپر انہیں یقین دہانی کرائی کہ نہ صرف ان کی سلامتی ممکن بنائی جائے گی بلکہ انہیں نوکریاں بھی دی جائیں گی۔ ذرائع سے معلوم ہواہے کہ افغانستان حکومت ان کی صلاحیتیوں کا استعمال کرنا چاہتی ہے، طالبان حکومت جب اقتدار میں آئی تو اس کے بعد فوج ختم ہوگئی اور نہ ہی افغانستان سے نئے کیڈٹ ٹریننگ کے لیے آئے۔یہ رپورٹ بھی سامنے آئی کہ طالبان نے پچھلی حکومت کے کئی فوجیوں اور اعلیٰ افسروں کو نہ صرف گرفتار کیا بلکہ ان میں سے کچھ لوگوں کو ہلاک بھی کردیا گیا۔ہندوستان نے ہمیشہ افغانستان کو نہ صرف اقتصادی مدد کی بلکہ افلاس اور بھوک مری کو مٹانے کے لیے دس لاکھ ٹن گندم بھی فراہم کیا، حال ہی میں وزارت خارجہ کے ایک اعلیٰ افسر نے افغانستان کا دورہ کیا جہاں وہ وزیرخارجہ امیرخان مدبر سے ملا ۔ اس کے علاوہ انہوں نے وزیردفاع ملا یعقوب سے بھی ملاقات کی۔ ان کے آنے کے بعد ہندوستان نے افغانستان میں ایک ٹیکنیکل ٹیم بھیج دی جووہاں پر کام کررہا ہے۔

You might also like