Baseerat Online News Portal

چینی جہاز کے سری لنکا پہنچنے کو لے کر ہندوستان الرٹ

نئی دہلی۔۵؍اگست:  ہندوستان اور چین کے درمیان کشیدگی ایک بار پھر بڑھنے کا خدشہ ہے۔ چین کا جہاز سری لنکا کی بندرگاہ کی طرف بڑھ رہا ہے۔ چین کا ایک ریسرچ اینڈ سروے جہاز 11 اگست2022 کو جنوبی سری لنکا میں ہمبنٹوٹا بندرگاہ پر پہنچنے کی توقع ہے۔ اس پیش رفت پر ردعمل دیتے ہوئے ہندوستان نے کہا ہے کہ وہ صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہے۔سری لنکا کی وزارت دفاع کے ترجمان کرنل نالن ہیراتھ نے کہا کہ سری لنکا ہندوستان کی تشویش کو پوری طرح سمجھتا ہے کیونکہ یہ جہاز فوجی تنصیبات کی نگرانی کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے لیکن یہ ایک معمول کی مشق ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ہندوستان، چین، روس، جاپان اور ملائیشیا کے بحری جہازوں نے وقتاً فوقتاً ہم سے درخواست کی ہے، اس لیے ہم نے چین کو اجازت دے دی ہے۔سری لنکا نے کہا کہ جب جوہری صلاحیت کے حامل جہاز آرہے ہیں، تب ہی ہم اجازت دینے سے انکار کر سکتے ہیں۔ یہ ایٹمی صلاحیت کا جہاز نہیں ہے۔چینی جہاز یوآن وانگ 5 نے سری لنکا سے ایندھن بھرنے کی اجازت طلب کی تھی۔ کرنل ہیراتھ نے کہا کہ ‘چین نے ہمیں بتایا ہے کہ وہ بحر ہند کے علاقے میں نگرانی اور نیوی گیشن کے لیے اپنا جہاز بھیج رہا ہے، اس کے رکنے کا وقت 11 سے 17 اگست ہے۔سری لنکا کی وزارت دفاع کے ذرائع نے بتایا کہ چینی جہاز انتہائی قابل اور جدید بحری جہاز ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ہندوستان اس لیے پریشان ہے کہ وہ نیوکلیئر پاور پلانٹس اور فوجی اڈوں کی نگرانی کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

You might also like