ہندوستان

گری راج کا ایک اور متنازعہ بیان

کہا ٹوچائلڈ پالیسی لاگو نہیں کی گئی تو پاکستان کی طرح ہمیں بھی اپنی بیٹیاں پردے میں رکھنی پڑے گی
پٹنہ، ۲۱؍اپریل: (بصیرت نیوز سروس) مرکزی وزیر گری راج سنگھ نے ٹو چائلڈ پالیسی پر ایسا بیان دیا ہے، جس سے تنازعہ پیداہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہندوستان میں ٹو چائلڈ پالیسی کو لاگو نہیں کیا گیا تو بیٹیاں محفوظ نہیں رہیں گی۔ ہو سکتا ہے کہ پاکستان کی طرح ہمیں انہیں بھی پردے میں رکھنا پڑے۔ انڈین ایکسپریس کی خبر کے مطابق، سنگھ نے کہا ” ہندو کو دو اور مسلمان کو بھی دو ہی بچے ہونے چاہئے، ہماری آبادی گھٹ رہی ہے۔ بہار میں سات اضلاع ایسے ہیں جہاں ہماری آبادی گھٹ رہی ہے۔ آبادی کنٹرول کے قوانین کو تبدیل کرنا ہوگا۔ تبھی ہماری بیٹیاں محفوظ رہیں گی۔ نہیں تو ہمیں بھی پاکستان کی طرح اپنی بیٹیوں کو پردے میں بند کرنا ہوگا۔ گری راج کے کہنے کا مطلب بہار کے کشن گنج اور ارریہ جیسے اضلاع سے تھا، جہاں مسلم آبادی ہندوؤں کے مقابلے بڑھ رہی ہے۔ گری راج سنگھ نے کہا “آزادی کے بعد ملک میں ہندوؤں کی آبادی 90 فیصد تھی، جو آج کم ہو کر 72-74 فیصد رہ گئی ہے۔ “جس طرح ہم نے آریہ ورت(بھارت کا پرانا نام) اور جمبو دیپ کھودیا اسی طرح ہندوستان نام بھی کھو دیں گے۔انہوں نے سادھوئوں کومخاطب کرتےہوئے کہاکہ “سادھو سنت مذہب کو بچا سکتے ہیں۔ اس لئے انہیں اپنی مذہبی سفر سال بھر جاری رکھنا چاہئے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker