مسلم دنیا

یہودی بس نذرآتش ، اسرائیلی فوج کی فلسطینی قصبے کی ناکہ بندی

نابلس ۔۲۴؍مئی: (مرکز اطلاعات فلسطین) فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے شمالی شہر نابلس میں حوارہ کے مقام پر فلسطینی مظاہرین کے پتھراؤ اور پٹرول بم حملے میں اسرائیلی بس نذرآتش کیے جانے کے واقعے کے بعد قابض فوج نے حوارہ کی مکمل ناکہ بندی کر کے گھر گھر تلاشی کا سلسلہ شروع کیا جو کئی گھنٹے تک جاری رہا ہے۔مرکزاطلاعات فلسطین کے نامہ نگار کے مطابق سوموار کے روز حوارہ میں اسرائیلی فوج اس وقت داخل ہوئی جب مشتعل فلسطینی مظاہرین نے یہودی آباد کاروں کی ایک بس کو آگ لگا دی تھی۔ اس واقعے کے بعد اسرائیلی فوجیوں نے حوارہ کے تمام داخلی اور خارجہ راستے بند کر دیے اور سڑکوں پر چلنے والی ٹریفک بھی ناکے لگا کر روک دی۔ اس کے بعد گھر گھر تلاشی کا سلسلہ شروع ہوا جو کئی گھنٹے تک جاری رہا۔خیال رہے کہ اتوار اور پیر کی درمیانی شب حوارہ کے مقام پر فلسطینی شہریوں نے یہودی آباد کاروں کی ایک بس پرحملہ کر کے اسے جلا ڈال تھا۔عینی شاہدین نے مرکزاطلاعات فلسطین کے نامہ نگار کو بتایا کہ قابض فوجیوں کی بڑی تعداد نے حوارہ میں داخل ہو کر اس کے تمام مرکزی راستوں کی ناکہ بندی کی اور اس کے بعد شہروں کی گھروں کی چھتوں پر چڑھ کر مورچہ بند ہو گئے۔ گھروں میں تلاشی اور شہریوں کے گھروں میں داخل ہونے کے بعد انہیں زدو کوب کرنے کا سلسلہ کئی گھنٹے تک جاری رہا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker