Baseerat Online News Portal

فلسطینی خاندان کو زندہ جلانےمیں ملوث یہودی دہشت گرد جیل سے رہا

مقبوضہ بیت المقدس ۔۲؍جون: (مرکز اطلاعات فلسطین) اسرائیلی حکام نے مئی 2015ء کو فلسطین کے علاقے مقبوضہ مغربی کنارے کے شمالی شہر نابلس میں دوما کے مقام پر ایک فلسطینی خاندان کو زندہ جلانے میں ملوث یہودی دہشت گرد کو رہا کر دیا ہے۔اسرائیل کے عبرانی ٹی وی 7 کی رپورٹ کے مطابق اسرائیلی عدالت نے دوابشہ خاندان کو زندہ جلانے میں ملوث ایک یہودی دہشت گرد مائیر اتنگر کو رہا کر دیا ہے۔ اتنگر کو اسرائیلی پولیس نے دس ماہ قبل حراست میں لیا تھا اور اس پر فلسطینی خاندان کو زندہ جلانےکے الزام میں مقدمہ چلایا گیا تھا۔رہا کردہ یہودی آباد کار کی رہائی کے فیصلے میں اسرائیلی عدالت نے حکم دیا ہے کہ وہ ایک سال مغربی کنارے میں داخل نہیں ہو سکے گا،رات کو گھر سے باہر نہیں نکلے گا اور 92 لوگوں سے رابطہ نہیں رکھے گا۔

You might also like