ہندوستان

ترکی اور بنگلہ دیش اسلامی تعلیمات کو ذریعہ امن بنائیں: شاہی امام

نئی دہلی ۲؍ جولائی[یو این آئی]بنگلہ دیش کی راجدھانی ڈھاکہ میں کل دہشت گردوں کی سفاکانہ واردات کی شدید مذمت کرتے ہوئے شاہی امام مولاناسید احمد بخاری نے کہاکہ یہ حرکت نہ صرف غیر انسانی بلکہ غیراسلامی بھی ہے اور اس عمل کو کسی بھی طورپر حق بجانب قرارنہیں دیا جاسکتا۔یہاں جاری ایک ریلیز میں انہوں نے اسلام کے نام پر دنیا کے مختلف ممالک میں قتل وغارت گری مچانے اور دہشت گردی پھیلانے کے لئے داعش کو مورد الزام ٹھہرا یا اور اس پر اسرائیلی ایجنٹ ہونے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ یہ بات ناقابل فہم ہے کہ ترکی اور بنگلہ دیش کون سے غیراسلامی کام کررہے ہیں جس کا بدلہ داعش خونریزی کرکے لیناچاہتاہے ۔مولانا بخاری نے یہ دعویٰ کرتے ہوئے کہ دنیا کاسب سے بڑادہشت گرد اسرائیل ہے جوگزشتہ 60 سال سے بے گناہ اور نہتے فلسطینیوں پر مظالم ڈھارہاہے، سوال کیا کہ کیا یہ ہولناک مظالم آئی ایس آئی ایس کو نظرنہیں آتے۔انہوں نے گزشتہ ہفتہ ترکی کے استنبول ایرپورٹ پر اندھا دھند بمباری اور فائرنگ میں چالیس سے زائد افراد کے ہلاک اور دوسو سے زائد لوگوں کے زخمی ہونے کو بھی موجب تشویش قرار دیا اور کہاکہ رمضان المبارک کے مقدس مہینہ میں بے گناہوں کو اس طرح سے قتل کرنا ایسا سنگین جرم ہے جسے اسلامی تعلیمات کی روشنی میں کسی بھی صورت میں معاف نہیں کیاجاسکتا۔مولانابخاری نے ترکی اور بنگلہ دیش کی حکومتوں اور وہاں کی عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ متحدہوکر اسلام دشمن طاقتوں کا مقابلہ کریں اور اسلامی تعلیمات کے ذریعہ امن کے پیغام کو عام کریں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker