ہندوستان

اتحاد اورہمدردی مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے بنیادی منتر

’’من کی بات‘‘ میںوزیر اعظم نے جی ایس ٹی بل سیاسی جماعتوں کی یکجہتی بتایا
ریواولمپکس میں سندھو اور ساکشی ملک کی جیت کو ناری شکتی بتایا
نئی دہلی، 28؍اگست-وزیر اعظم نریندر مودی نے آج محبت اور اتحاد کو مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے بنیادی منتر بتایا اور بچوں کو بدامنی پیدا کرنے کے لیے اکسانے والوں پر یہ کہتے ہوئے ناراضگی کا اظہار کیا کہ ایک نہ ایک دن ان لوگوں کو ان بے قصوربچوں کو جواب دینا ہی ہوگا۔وزیر اعظم نے زور دے کر کہا کہ کشمیر میں اگر ایک بھی شخص کی جان جاتی ہے، چاہے وہ کوئی نوجوان ہو یا سیکورٹی اہلکار ، تو وہ ہمارا، ہمارے ملک کا نقصان ہے۔مودی نے اپنے ماہانہ ریڈیو پروگرام ’من کی بات‘میں وادی میں پھیلی بدامنی کے بارے میں کہاکہ کشمیر میں سبھی فریقوں کے ساتھ میری بات چیت میں ایک ہی چیز سامنے آئی ہے جسے آسان الفاظ میں اتحاداور ہمدردی کہا جا سکتا ہے۔یہ دونوں چیزیں ہی وہاں کا مسئلہ حل کرنے کے لیے بنیادی منتر ہیں۔انہوں نے کہا کہ کشمیر پر تمام سیاسی جماعتوں نے ایک آواز میں بات کی ہے جس سے پوری دنیا میں اور علیحدگی پسند طاقتوں تک پیغام پہنچا ہے اور اس کے ساتھ ہی کشمیر کے لوگوں تک ہمارے جذبات پہنچے ہیں۔وزیر اعظم نے پارلیمنٹ کی طرف سے منظور اہم جی ایس ٹی بل کی راہ سے موازنہ کیا ۔غور طلب ہے کہ پارلیمنٹ میں جی ایس ٹی بل پر تمام سیاسی جماعتوں نے یکجہتی کا مظاہرہ کیا تھا ۔’من کی بات ‘میں مودی نے کہاکہ یہ ہم سبھی کی سوچ ہے، گاؤں کے ایک پردھان سے لے کر وزیر اعظم تک 125کروڑ لوگوں کی سوچ ہے کہ اگر کشمیر میں ایک بھی شخص کی جان جاتی ہے، چاہے وہ کوئی نوجوان ہو یا کوئی سیکورٹی اہلکارتو وہ ہمارا، ہمارے اپنے ملک کا نقصان ہے۔ساتھ ہی انہوں نے کشمیر میں بدامنی پیدا کرنے کی کوشش میں چھوٹے بچوں کو استعمال کرنے والے لوگوں پر یہ کہتے ہوئے ناراضگی ظاہر کی کہ ایک دن ان لوگوں کو ان بے قصور بچوں کو جواب دینا ہی ہوگا۔وزیر اعظم کے اس تبصرے سے ایک دن پہلے ہی جموں کشمیر کی وزیر اعلی محبوبہ مفتی نے مودی سے ملاقات کرکے تین نکاتی حکمت عملی انہیں پیش کی تھی ، اس حکمت عملی میں سبھی فریقوں کے ساتھ بات چیت شامل ہے۔مودی نے کہاکہ یہ ملک بہت بڑا اور تنوع سے مالا مال ہے۔اس کو متحد رکھنے کے لیے ایک شہری، ایک سماج اور ایک حکومت کے طور پر اتحاد کو اتنا زیادہ مضبوط کرنا ہم سب کی ذمہ داری ہے جتنا کہ ہم کر سکتے ہیں، تبھی ملک کا مستقبل روشن ہو گا، مجھے ملک کی 125عوام کی طاقت پر پورا بھروسہ ہے۔اپنی 35منٹ کی تقریر میں وزیر اعظم نے حال ہی میں اختتام پذیر اولمپک کھیلوں کا بھی ذکر کیا اور ناری شکتی کی تعریف کی، انہوں نے میڈل جیتنے والی بیڈمنٹن کھلاڑی پی وی سندھو اور پہلوان ساکشی ملک کا ذکر کر رہے تھے، انہوں نے جمناسٹ دیپا کرماکر کی بھی تعریف کی جو بہت ہی معمولی فرق کی وجہ سے میڈل سے چوک گئیں ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker