ہندوستان

علیحدگی پسندوںنے محبوبہ کی بات چیت کی تجویزکو مسترد کیا

علیحدگی پسندوںنے محبوبہ کی بات چیت کی تجویزکو مسترد کیا
سرینگر، 4 ستمبر:علیحدگی پسند رہنماؤں نے آج کل جماعتی وفد سے ملنے کی وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی کی دعوت کو مسترد کرتے ہوئے اس طرح کے اقدامات کو ’’چھلوا‘‘قرار دیا اور زور دے کر کہا کہ اہم مسئلہ پر غور کرنے کا یہ ایجنڈا مذاکرات کا متبادل نہیں ہو سکتا۔محبوبہ کی طرف سے پی ڈی پی سربراہ کے طور پر علیحدگی پسندوں کو مدعو کرنے کے ایک دن بعد علیحدگی پسند رہنماؤں(حریت کانفرنس کے دونوں گروپوں کے)سید علی شاہ گیلانی، میر واعظ عمر فاروق اورمحمد یاسین ملک نے یہاں ایک مشترکہ بیان جاری کرکے ان کی تجویز کو مسترد کر دیا۔انہوں نے کہا کہ پارلیمانی وفد اور ’’ٹریک ٹو‘‘کے ذریعے بحران کے حل کیلئے اپنائے گئے اس طریقے سے صرف لوگوں کی پریشانیاں کوبڑھیں گی اور یہ جموں وکشمیر میں لوگوں کی خود ارادیت کے حق کے اہم معاملے پرغورکرنے کیلئے قدرتی شفاف ایجنڈا بنیاد پر مذاکرات کی جگہ نہیں لے سکتے۔بیان میں کہا گیا کہ یہ ہمارا رخ مسلسل رہا ہے اور مختلف بین الاقوامی اور عالمی فورم کو ہمارے خطوط میں بھی اسے واضح کیا گیا ہے۔علیحدگی پسند رہنماؤں نے واضح کیا کہ ان کی مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کی قیادت والے وفد سے ملنے میں دلچسپی نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ سمجھ سے پرے ہے کہ ایسے وفد سے کیا امید کی جا سکتی ہے جس نے واضح ایجنڈا پر کسی بات چیت کے لئے اپنے رخ کو واضح نہیں کیا۔

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker