مسلم دنیا

اردن:‘قندیل القدس‘ مہم کے دوران ڈیڑھ ملین ڈالر کے عطیات جمع

رقم القدس میں مقدس مقامات کی مرمت پر صرف کی جائے گی
عمان :16؍نومبر(بی این ایس؍ایجنسی)اردن میں فلسطین میں مقدس مقامات کے دفاع کے لیے سرگرم سماجی کارکنان کی طرف سے شروع کی گئی فنڈ ریزنگ مہم کے دوران ڈیڑھ ملین ڈالر کی رقم جمع کرنے کا نیا ریکارڈ قائم کیا ہے۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق اردن میں مقامی سطح پر بیت المقدس میں موجود مقدس مقامات کی تعمیر ومرمت کے لیے ’’ہمیں عزم کی شمع روشن کرنا ہے‘‘ کے عنوان سے ایک مہم شروع کی گئی تھی۔ اس مہم میں تاجروں، سیاسی رہ نما، طلباء اور عام شہریوں نے بڑھ چڑھ کر حصہ لیا اور مہم کے دوران 10 لاکھ 57 ہزار 387 اردنی دینار جمع کرکے القدس کے ساتھ اپنی مذہبی اور روحانی وابستگی کا ثبوت دیا ہے۔اردن میں اس مہم کی نگرانی اردنی انجینیرنگ یونین نے کی۔ یہ اس مہم کا چھٹا مرحلہ ہےجس میں نصرت مسجد اقصیٰ کے لیے ’’ہمیں القدس میں عزم کی شمع روشن رکھنا ہے‘‘ کے عنوان سے مہم چلائی گئی۔ مہم کو آگے بڑھانے میں مقامی ذرائع ابلاغ بالخصوص حسنی ریڈیو کی خدمات بھی قابل قدر ہیں۔اس مہم کے تحت جمع کی جانے والی رقم بیت المقدس میں اسرائیلی فوج کی جانب سے مسمار کیے گئے فلسطینیوں کے مکانات کی دوبارہ تعمیر میں معاونت کے ساتھ ساتھ القدس میں موجود مقدس مقامات کی تعمیرو مرمت بھی شامل ہے۔پروگرام کے نگران اور اردنی انجینیر یونین کے سربراہ ماجد الطباع کا کہنا ہے کہ ’’عزم کی شمع روشن کریں‘ پروگرام کے تحت پچھلے سات سال کے دوران بیت المقدس کے 800 شہریوں کی زندگیاں تبدیل کی گئی ہیں۔ اس پروگرام کے تحت بیت المقدس میں اسرائیلی فوج کی طرف سے مسمار کیے گئے فلسطینیوں کے 158  مکانات کی تعمیر میں ان کی مدد کی گئی ہے۔ماجد طباع کا کہنا تھا کہ سنہ 2015ء کے دوران ’عزم کی شمع روشن رکھیں‘ پروگرام کے تحت اردنی شہریوں نے القدس کے باشندوں کی فلاح و بہبود کے لیے 1.875 ملین اردنی ریال کےعطیات جمع کرائے ہیں۔ جب کہ سنہ 2010ء کے بعد سے بیت المقدس کے 800 شہریوں کی اس پروگرام کے ذریعے مدد کی گئی۔ اس پروگرام سے 155 طلباء نے بھی استفادہ کیا۔ پچھلے پانچ پروگرامات کے دوران اردنی شہریوں کی طرف سے القدس کے باشندوں کے لیے 40  لاکھ اردنی دینار کے عطیات جمع کرائے ہیں۔انجینیر ماجد طباع نے اردنی خاتون رکن پارلیمان دیمہ طھبوب کی طرف سے ایک ماہ کی مکمل اور ہر ماہ کی ایک تہائی تنخواہ القدس کے باشندوں کے لیے وقف کرنے پر ان کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ دیمہ طھبوب کے اقدام سے القدس کے باشندوں کے لیے جاری فلاحی پروگرام میں حصہ لینے والوں کو ایک نیا جذبہ اور حوصلہ ملے گا۔

Tags

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker