مسلم دنیا

اسرائیلی عدالت سے فلسطینی دو شیزہ کو ساڑھے آٹھ سال قیدوجرمانہ کی سزا

مقبوضہ بیت المقدس :5؍جنوری( بی این ایس؍ایجنسی)اسرائیل کی ایک مرکزی عدالت نے زیرحراست فلسطینی دو شیزہ 18 سالہ مرح جودت موسیٰ بکیر کو یہودی آباد کاروں پر چاقو سے حملے کا نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی کے الزام میں ساڑھے آٹھ سال قید اور 10 لاکھ شیکل جرمانہ کی سزا سنائی ہے۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق مرح جودت بکیر کو صہیونی فوج نے 12 اکتوبر 2015ء کو حراست میں لیا تھا۔ بیت المقدس سے تعلق رکھنے والی مرح کی گرفتاری سے قبل اسے قابض فوج نے تین گولیاں ماریں جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہوگئی تھیں۔مرح کو اس وقت گولیاں ماری گئیں جب وہ بیت المقدس میں الشیخ جراح کالونی میں قائم اسکول سے باہر نکل رہی تھی۔ زخمی حالت میں گرفتاری کے بعد مرح کو کچھ عرصے کے لیے اسپتال منتقل کیا گیا مگر اب وہ علاج کی سہولت سے محروم ’ھشارون‘ جیل میں قید ہے۔صہیونی حکام کی طرف سے فلسطینی دو شیزہ پر یہودی فوجیوں پر چاقو سے حملہ کرنے کی کوشش کا الزام عاید کیا گیا اور اس کے خلاف اسی الزام کے تحت مقدمہ چلایا گیا۔ گذشتہ روز اسرائیل کی مرکزی عدالت نے اسے آٹھ سال چھ ماہ قید اور اسرائیلی کرنسی میں 10 لاکھ شیکل جرمانہ کی سزا سنائی گئی۔

Tags

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker