Baseerat Online News Portal

بی جے پی کو شکست دینے کے لئے مہاگٹھ بندھن واحدمتبادل

ملک خطرناک موڑپر، نتیش کمارنے تمام غیربی جے پی جماعتوں کوایجنڈہ طے کرنے اورسنجیدہ فکرکی دعوت دی
پٹنہ3اپریل:بہارکے وزیراعلیٰ نتیش کمارنے پیرکوکہاکہ2019کے لوک سبھاانتخابات میں بی جے پی کو قومی سطح پر شکست دینے کے لئے غیربی جے پی پارٹیوں کے مہاگٹھ بندھن کی ضرورت ہے۔جے ڈی یوکے صدرنے کہاکہ اگر مہاگٹھ بندھن ہو جائے تو اگلے پارلیمانی انتخابات میں وہ ضرور کامیاب ہوگا۔انہوں نے کہاکہ2015کے بہاراسمبلی انتخابات میں جے ڈی یو، آرجے ڈی اور کانگریس کا مہاگٹھ بندھن ہوا تھا، جو پوری طرح کامیاب رہا اور بی جے پی کی قیادت والی این ڈی اے ہار گئی۔نتیش نے کہاکہ مذہب کی بنیاد پر تقسیم، نسلی مساوات اور پیسے کی بدولت حالیہ انتخابات میں کئی ریاستوں میں کامیاب ہوئی ہے۔بی جے پی کے بڑھتے قدم کو کس طرح روکا جائے، اس کا واحد جواب مہاگٹھ بندھن ہے۔نتیش نے کہاکہ مہاتما گاندھی کے اس ملک میں جس طرح ہندوتو کو فروغ دیا جا رہا ہے،یہ ملک کے سماجی تانے بانے کے لئے بہت خطرناک ہے۔اسے ہر حال میں روکناہوگا۔بی جے پی سیکولر جماعتوں میں بکھیر کا فائدہ اٹھا رہی ہے۔اسے روکنے کے لئے قومی سطح پر غیر بی جے پی پارٹیوں کامتحد ہونا بہت ضروری ہے۔جے ڈی یونے غیر بی جے پی پارٹیوں سے اپیل کی کہ وہ ملک کے اقتدار پر قابض اتحادکے ایجنڈے پر اپنی رائے دینے کے بجائے اپنا ایجنڈا طے کریں۔نتیش کمار نے کہا کہ وزیراعظم کے عہدے کے لیے سنجیدہ طریقے سے ہینڈل کرنے ملک میں رہنماؤں اور چہروں کی کمی نہیں ہے۔

You might also like