Baseerat Online News Portal

مودی نے کی تھی مسلمانوں کے حق کی بات

پھر تلنگانہ میں ریزرویشن پر بی جے پی چراغ پاکیوں؟
بی جے پی نے ختم کرنے کی دھمکی دی،عدالت میں بھی مسلم ریزرویشن کی مخالفت کااعلان
نئی دہلی17اپریل: ایک طرف اڑیسہ میں پی ایم مودی نے پسماندہ مسلمانوں کی پسماندگی دورکرنے کی بات کہی تو وہیں بی جے پی تلنگانہ میں پسماندہ مسلمانوں کا ریزرویشن بڑھائے جانے کے بل کی مخالفت کرتی نظر آئی، لیکن ریاست اسمبلی میں چندرشیکھر راؤحکومت یہ ریزرویشن بڑھوانے میں کامیاب رہی ۔ وزیراعلیٰ کے چندر شیکھر راؤ نے اسمبلی میں کہا کہ اب اسے صدر کی منظوری کے لئے بھیجا جائے گا۔ اس بل کے تحت سینٹ کے لئے ریزرویشن کو موجودہ 6 فیصد سے بڑھا کر 10 فیصد کر دیا گیا ہے جبکہ بی سی-ای (مسلم کمیونٹی کے پسماندہ طبقے) کے لئے اسے موجودہ 4 فیصد سے بڑھا کر 12 فیصد کر دیا گیا ہے۔ اس کے نتیجے میں ریاست میں کل بکنگ موجودہ 50 فیصد سے بڑھ کر62 فیصدہو جائے گا. اس کے بعد ریاست میں کل ریزرویشن 62 فیصد تک پہنچ گئی ہے جو سپریم کورٹ کی 50÷ کی حد سے زیادہ ہے۔ اگرچہ اس بل کو قانون بننے کے لیے صدر کی منظوری ضروری ہے۔تلنگانہ میں مسلمانوں کے لیے ریزرویشن بڑھانے والے بل کو بی جے پی نے ردی کا ٹکڑا بتایا ہے۔ پارٹی نے کہا کہ اس کی کوئی قانونی اور آئینی حیثیت نہیں ہے اور یہ مرکزی حکومت کی سطح پر منسوخ ہو جائے گا۔ بی جے پی ترجمان کرشن ساگر راؤ نے بتایاکہ مرکزی حکومت کی سطح پر یہ شروع میں ہی منسوخ کر دیا جائے گا۔ راؤنے کہاکہ مذہب ریزرویشن دینے کی بنیاد نہیں ہو سکتا ہے اور قانونی طور پر یہ عملی نہیں ہے کیونکہ ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ نے ریزرویشن کی حد50 فیصدطے رکھی ہے۔ انہوں نے کہاکہ مقامی بی جے پی یونٹ اس کی آئینی حیثیت کو عدالت میں چیلنج کرے گی۔ انہوں نے طریقہ کار پر عمل نہیں کیااور اس وجہ سے یہ بل ردی کے ٹکڑے کی طرح ہے، اس کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے۔ راؤنے کہاکہ یہ عدالتوں کی انکوائری کے سامنے ٹک نہیں پائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ بھونیشور میں اختتام بی جے پی قومی عاملہ میں بھی اس مسئلے کو اٹھایا گیا اور اس پر تبادلہ خیال کیا گیا۔غور طلب ہے کہ بی جے پی کے سینئر لیڈر وینکیا نائیڈو نے کہا تھا کہ ملک میں مذہب کی بنیاد پر ریزرویشن لاگو کرنے سے سماجی بدامنی پیدا ہو سکتی ہے اور اس سے ’’ایک اورپاکستان‘‘ بن سکتاہے۔ امبیڈکر جینتی کے موقع پر بی جے پی کے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے نائیڈو نے یہ بھی اشارہ دیا تھا کچھ طبقوں کے لیے ریزرویشن بڑھانے کا تلنگانہ کا حالیہ بحرا ن بحران کاسبب ہوسکتاہے کہ آئینی طور پر جائز نہیں ہو۔ انہوں نے یہ بھی کہا تھا کہ آئین ڈویلپر بی آر امبیڈکر نے مذہب کی بنیاد پر ریزرویشن کی مخالفت کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ ہم مذہب کی بنیاد پر ریزرویشن کی مخالفت اس لئے نہیں کر رہے ہیں کیونکہ چندرشیکھر راؤ اسے لاگوکرناچاہتے ہیں۔

You might also like