ہندوستان

امانت اللہ خان پر اب اور کوئی کارروائی نہیں

اروند کیجریوال کنوینر بنے رہیں گے
نئی دہلی، 2؍مئی (آئی این ایس انڈیا )عام آدمی پارٹی کے اعلی سطحی ذرائع کے مطابق ، اوکھلا سے پارٹی کے ممبر اسمبلی امانت اللہ خان کے خلاف اور کوئی کارروائی نہیں ہوگی، جو کارروائی ہونی تھی وہ امانت اللہ کے پارٹی کی پی اے سی سے استعفے کے ساتھ ہو گئی ہے۔پارٹی کے کچھ اراکین اسمبلی نے امانت اللہ پر ہوئی کارروائی کو ناکافی قرار دیتے ہوئے ان کو پارٹی سے نکالنے کامطالبہ کیا تھا ۔پارٹی کے ماڈل ٹاؤن سے ممبر اسمبلی اکھلیش ترپاٹھی نے مطالبہ کرتے ہوئے منگل کی صبح کہا کہ امانت اللہ کے پی اے سی سے استعفے سے کام نہیں چلے گا ان کی ایسی بیان بازی کے لیے انہیں پارٹی سے بھی نکالا جائے ۔پیر کی رات کو ہوئی عام آدمی پارٹی کی سیاسی معاملات کی کمیٹی نے صاف طور پر امانت اللہ کے بیان کی مذمت کی تھی ،ساتھ ہی کمار وشواس کے میڈیا میں دئے گئے بیان پر بھی افسوس کا اظہار کیا تھا۔دونوں طرف سے ہو رہی بیان بازی پر تشویش کااظہار کرتے ہوئے لیڈروں کو خبردار کیا بھی گیا تھا اور کام پر توجہ دینے کی ہدایت دی گئی تھی ۔پارٹی کے قومی کنوینر اروند کیجریوال کیا اپنا عہدہ چھوڑیں یا کوئی اور اس پر دعویداری پیش کر سکتا ہے؟ اس پر پارٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ اروند کجریوال کو پارٹی کی قومی کونسل 2019تک قومی کنوینر منتخب کیا ہے۔3سال تک کے لیے قومی کنوینر منتخب کیا جاتا ہے، لیکن الیکشن کمیشن کی گائڈلائن کے مطابق ،قومی کونسل کا اجلاس سال میں ایک بار ہونا ضروری ہے، یہ اجلاس گزشتہ سال اپریل میں ہوا تھا ، اس لیے اب اجلاس ہونا طے ہے، لیکن ابھی تاریخ طے نہیں ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker