ہندوستان

دلتوں کے مسیحا بننے والے بی جے پی لیڈر شبیر پور سے غائب !

فریقین کی تحریر پر نصف درجن مقدمے درج
دونوں طرف سے17؍ گرفتاریاں،کثیر تعداد میں پولیس اور ملٹری فورس تعینات
گاؤں کا ماحول پر امن مگر کشیدگی برقرار،علاقہ کے دلتوںمیں زبردست خوف و دہشت ،سیاسی بازار گرم
دیوبند،۶؍ مئی(نامہ نگار)بی جے پی کے ڈیڑھ ماہ کے دور اقتدارکے دوران ضلع میں محض پندرہ یوم کے وقفہ میں دو بڑے فرقہ وارانہ واقعات رونما ہوچکے ہیں،جنہوںنے قانونی نظم و نسق کی بدتر حالت کی پوری کیفیت بیان کردی ہے اور سابقہ حکومت کو نشانہ بنانے والی بی جے پی کے دور کی حقیقت کو بھی پوری طرح واضح کردیا ۔ گزشتہ روز دیوبند کے متصل موضع شبیر پور میں راجپوت اور دلتوں کے مابین رونما ہوئے سنگین خونی تصادم کے بعد دلت فرقہ کے لوگوں میں زبردست دہشت ہے اور وہ ڈرے سہمے اپنے گھروں میں دبکے پڑے ہیںوہیں سڑک دودھلی معاملہ میں دلتوں کا مسیحا بننے والے بی جے پی لیڈران پوری طرح غائب ہیں اور اس پورے معاملہ میں وہ حاشیہ پر کھڑ ے دکھائی دے رہے ہیں۔ اس فساد میں حالانکہ ایک ٹھاکر نوجوان کی موت ہوگئی مگردلتوں کے درجن بھر مردو خواتین اسپتالوں میں زندگی اور موت کی لڑائی لڑ رہے ہیں،اتنا ہیں نہیں بلکہ دلتوںکے دودرجن سے زائد مکانات جلاکر راکھ کردیئے گئے ،بابا صاحب ڈاکٹر بھیم راؤ امبیڈ کی مورتی کے علاوہ مندر میں بھی توڑ پھوڑ کے علاوہ شملہ،شبیر پور، مہیش پور، چند پور وغیرہ سمیت اطراف کے دیہی مواضعات کے دلتوں کی دکانوں،کھوکھوں اور گذر بسر کا سہارے چھوٹے چھوٹے کاروباروں کو پوری طرح تباہ کردیاگیا،گاؤں میں بھڑکے آگ کے شعلوں سے مویشی اور لوگوں کی موٹر سائکلیں تک جلادی گئی۔ مگر بی جے پی لیڈران ایسے غائب ہیں جیسے انہیں اس پورے معاملہ کا علم ہی نہیں ہے۔ پندرہ یوم قبل گاؤں سڑک دودھلی میں دلتوں کا مسیحا بننے کے لئے بی جے پی رکن پارلیمنٹ راگھو لکھن پال شرما نے ڈاکٹر امبیڈ کر کی بغیر اجازت سے نہ صرف شوبھا یاترا نکالی تھی بلکہ ایسی ضد پر اڑ گئے کہ انہوں نے مسلم طبقہ کے خلاف زبردست زہر اگلا اور ایس ایس پی کی رہائش گاہ پر چھ گھنٹے تک قبضہ کرکے ایم پی کی قیادت میں بی جے پی لیڈران نے قانون کو اس کی حیثیت بتادی تھی ،مگر گزشتہ روز اس سے بھی زائد سنگین صورت حال شبیر پور گاؤں میں دلتوں اور ٹھاکروں کے درمیان پیش آئی ہے،جس میں ایک نوجوان کی موت واقع ہوگئی بلکہ درجنوں لوگ اسپتالوں میں زیر علاج ہیں اتناہی نہیں دیوبند کوتوال چمن سنگھ چاوڑابھی پتھراؤ کی زد میں آکر زخمی ہوگئے تھے،ٹھاکر نوجوان کی موت کے بعد شبیرپور ودیگر دیہی مواضعات میں جو خونی کھیل کھیلا گیا اس سے پورا علاقہ دہشت زدہ ہوگیا اور راستے میں آتے جاتے راہگیروں تک کے ساتھ مارپیٹ کی گئی ،جس کے سبب لوگوں نے اپنے راستے بدل دیئے۔ اس سنگین واقعہ میںنہ صرف دلتوں کو زبردست نقصان پہنچایا گیا بلکہ ان کے ذہنوں میں ایسا خوف پیدا کردیاگیا ہے کہ وہ ٹھاکروں کے اکثریتی مواضعات کے راستوں سے بھی گذرنے کی ہمت نہیں کرپارہے ہیں ۔تصادم کی واردات میں دونوں فریق کی تحریر پر نصف درجن مقدمے درج ہوئے ہیں جس کے بعد طرفین کی17؍ گرفتاریاں عمل میں آئی ہے۔ گاؤں میں ایس پی دیہات رفیق احمد کی قیادت میں بڑی تعداد میں پولیس اور پی ایس سی فورس تعینات ہے ۔ ایس پی دیہات رفیق احمد نے بتایا کہ گاؤں کاماحول پوری طرح پر امن ہے ،شرپسندوں کے خلاف کارروائی کی جارہی ہے، ابھی تک 17؍ افراد کو گرفتار کرکے جیل بھیجا جاچکاہے ،غیر سماجی عناصر سے سختی سے نمٹا جائے گا۔گاؤں کا ماحول پر امن مگر کشیدگی برقرار ہے۔ڈی ایم اور ایس ایس پی نے آج بھی گاؤں پہنچ کر جائزہ لیا اور لوگوں سے امن امان بنائے رکھنے کی اپیل کی۔ گاؤں شبیر پور میں راجپوت اور دلتوں کے مابین تصادم کے بعد آج دن بھر گاؤں میں نیتا داخل ہونے کوشش کرتے رہے لیکن پولیس نے کسی بھی لیڈر کو گاؤں میں گھسنے نہیں دیا ،جس کے سبب عمران مسعود سمیت کئی کانگریسی لیڈروںنے ضلع اسپتال پر دھرنا دیااور گمچھا داری شرپسندوں کو نشانہ بناتے ہوئے ریاستی حکومت پر سخت تنقید کی۔ علاوہ ازیں بی ایس پی اور بی جے پی لیڈران نے بھی گاؤں شبیر پور جانے کی کوشش کی لیکن پولیس نے کسی بھی نیتا کو گاؤں میں داخل نہیںہونے دیا۔ پندرہ یوم میں سہارنپور میں دو مرتبہ ہوچکی سنگین وارداتوں کے بعد آج ڈی جی پی اورپرنسپل سکریٹری سہارنپور پہنچ کر جائزہ لینگے۔ریاست کے نئے ڈی جی پی سلکھان سنگھ آج سہارنپور پہنچ کر اعلیٰ افسران سے میٹنگ کرینگے اور ضلع کے حالات کا جائزہ لینگے ،پرنسپل سکریٹری دیبا شیش پانڈا بھی سہارنپو رپہنچے گیں ۔ ڈی جی پی پندرہ دن میں سڑک دودھلی کے بعد بڑگاؤں کے شبیر پور میں پیش آئی سنگین واردات کے بابت افسران سے گفت و شنید کرینگے ۔ بتایا جاتاہے کہ ڈی جی پی سلکھان سنگھ اور پرنسپل سکریٹری دیباشیش پانڈا گاؤں شبیر پور کادورہ بھی کرسکتے ہیں۔

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker