ہندوستان

’’مسلمانوں کی آزمائش بار بار ہوتی رہی ہے اور ہوتی رہے گی‘‘ سلیم الوارے

آل انڈیا مسلم مجلس مشاورت کے احتجاجی جلسے میںامریکی فیصلے کی مذمت
ممبئی۔۱۵؍دسمبر: (فرحان حنیف وارثی)آل انڈیا مسلم مجلس مشاورت ممبئی کی طرف سے جمعہ ۱۵؍دسمبر کوبعد نماز مغرب خلافت ہائوس بائیکلہ میں امریکہ کے حالیہ ناعاقبت اندیش فیصلے کی مذمت میں ’’ایک ہیں مسلم حرم کی پاسبانی کے لیے‘‘ عنوان کے تحت منعقدہ جلسے میں مشاورت کی ممبئی کمیٹی کے رکن سلیم الوارے نے پروگرام کی غرض وغایت بیان کی اور آل انڈیا مسلم مجلس مشاورت کی تاریخ پر بھی روشنی ڈالی۔ سلیم الوارے نے کہاکہ یوں تو مسلمانوں کی آزمائش بار بار ہوتی رہی ہے او رہوتی رہے گی کیو ںکہ ہم نے کلمہ پڑھا ہے۔ انہوں نے کہاکہ شہر میں ۱۹۶۱ میں فلسطین کی حمایت میں نکالے جانے والا جلوس کرافورڈ مارکیٹ سے بائیکلہ تک تھا مگر آج کے حالات میں پابندیاں عائد ہیں لہذا ہم اس جلسے کے توسط سے اپنا احتجاج درج کروارہے ہیں۔ عامر ادریسی نے نظامت کے دوران کہاکہ ممبئی کو یہ شرف حاصل ہے کہ ہمیشہ فلسطین یا کسی اور قوم کے مسئلے میں یہاں کے مسلمانوں کا دل دھڑکتا ہے او رامت کے مسئلے میں سب متحد ہوکر جمع ہوجاتے ہیں۔ عامر ادریسی نے کہا کہ جس طرح سے امریکہ نے یروشلم کو اسرائیل کا دارالخلافہ بنایا اور اپنا سفارت خانہ تل ابیب سے تبدیل کرکے یروشلم میں لانے کی کوشش کررہا ہے اس کو نہ صرف ہم ہندوستانی مسلمان بلکہ دنیا کے سبھی مسلمان شدید مخالفت کررہے ہیں۔ آل انڈیا مسلم مجلس مشاورت کے اس احتجاجی جلسے میں بڑی تعداد میں مسلمانوں کے علاوہ مشاورت کمیٹی کے کارگزار صدر سعید خان، آل انڈیا خلافت کمیٹی کے جنرل سکریٹری سرفراز آرزو، اندھیری مسجد کے امام مولانا فیاض باقر، مولانا ظہیر عباس رضوی، اسلم غازی، ایڈوکیٹ عاصم اور دیگر اراکین موجود تھے۔ اس احتجاجی جلسے میں ایک قرار دا د بھی منظور کی گئی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker