ہندوستان

حضور اقدس ﷺنبی آخرالزماں ہیں، آپ ﷺکے بعد کوئی نبی نہیں آنے و الا

کل ہند مجلس تحفظ ختم نبوت دارالعلوم دیوبند کےزیر اہتمام دہلی میں تحفظ ختم نبوت کانفرنس سے قاری عثمان صاحب کا خطاب
نئی دہلی:۶؍جنوری (پریس ریلیز) کل ہند مجلس تحفظ ختم نبوت دارالعلوم دیوبند کے ز یر نگرانی اور جمعیۃ علماء صوبہ دہلی کے زیر اہتمام ایوان غالب نئی دہلی میں تحفظ ختم نبوت کانفرنس منعقد ہوئی، جس کا آغاز مولانا قاری محمد عثمان قاسمی اما م وخطیب مسجد شاہ گنج کی تلاوت قرآن مجید اور حافظ محمد سہراب متعلم باب العلوم جعفرآباد کے ذریعہ حمد ونعت پاک سے ہوا ۔ناظم کل ہند مجلس ختم نبوت دارالعلوم دیوبند اور جمعیۃ علماء ہند کے صدر مولانا قاری سید محمد عثمان منصورپوری نے اپنے خصوصی خطاب میں ختم نبوت کی تفصیلات بیان کرتے ہوئے فرمایا کہ حضور اقدس صلی اللہ علیہ وسلم نبی آخرالزماں ہیں، آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے بعد کوئی نبی نہیں آنے و الا ہے۔ جہاں تک حضرت مہدی کی بات ہے وہ نبی نہیں ہوں گے اور جو حضرت مہدی کے ظہور کی خصوصیات ہیں وہ کسی میں نہیں پاتی جاتی ہیں، مہمان خصوصی مولانا مفتی عفان منصورپوری صدر المدرسین جامع مسجد امروہہ نے اپنے خطا ب میں علامات قیامت پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ حضرت مہدی کی علامتِ ظہور نہایت واضح ہیں ۔ احادیث صحیحہ کے مطابق کسی بھی اعتبار سے شکیل بن حنیف میں کوئی علامت نہیں پائی جاتی ہے ، آپ نے کہا کہ علماء و ائمہ کو بیدار رہنے کی ضرورت ہے ۔ مولانا عابد قاسمی صدر جمعیۃ علماء دہلی نے شکیل بن حنیف کے تعلق سے عوام کو متوجہ کرتے ہوئے کہا کہ اس عنوان پر دہلی میں جگہ جگہ پروگرام ہو نا چاہیے ، ناظم کانفرنس مولانا جاوید صدیقی قاسمی جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء صوبہ دہلی نے تحفظ ختم نبوت کانفرنس میں تجاویز پیش کرتے ہوئے کہا کہ اہل مدارس اپنے طور سے تحفظ ختم نبوت کے لیے مبلغین طے کریں اور تربیتی کیمپ کا انعقاد کریں، کتابچے ، رسالے اپنے اداروں کے نام سے شائع کریں ۔ حاضرین نے بالاتفاق ہاتھ اٹھا کر ان تجاویز کی تائید کی ۔ مولانا وسیم ندوی استاذ جامعہ سنابل اوکھلہ نے کہا کہ ختم نبوت کا عقیدہ امت کا متفقہ ایمانی عقیدہ ہے ۔ جمعیۃ علماء ہند اور دارالعلوم دیوبند نے اس اہم مو ضوع پر کانفرنس کا انعقاد کرکے پوری امت پر احسان کیا ہے ۔ مولانا مسلم قاسمی صدر جمعیۃ علماء صوبہ دہلی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں جمعیۃ علماء صوبہ دہلی کو مبارک باد پیش کرتاہوں کہ دارالعلوم دیوبند کے اہم شعبہ تحفظ ختم نبوت جس کی خدمات بہت زیادہ ہیں ، آج اس کی دہلی یونٹ کو متحرک کیا گیا۔ یہ کانفرنس اسی سلسلے کی اہم کڑی ہے ۔مولانا دائود امینی نائب صدر جمعیۃ علماء صوبہ دہلی نے مدرسہ باب العلوم کے زیر اہتمام سات الگ الگ اہم موضوعات پر کتابچے کانفرنس میں تقسیم کرائے ، آپ نے اس کانفرنس کے انعقاد کو وقت کی اہم ضرورت بتاتے ہوئے تربیتی کیمپ کے انعقاد کا اعلان کیا ۔ان کے علاوہ دیگر اہم خطاب کرنے و الو ںمیں مولانا آصف محمود قاسمی امام وخطیب ان شاء للہ مسجد چوہان بانگر، مفتی ذکاوت حسین شیخ الحدیث مدرسہ امینیہ کشمیری گیٹ، مفتی اشرف قاسمی صدر مفتی مدرسہ حسین بخش، ڈاکٹر سعید الدین قاسمی نانگلوئی ، مفتی عبدالصمد قاسمی نائب صدر جمعیۃ علماء مغربی زون یوپی، مولانا ابراہیم قاسمی صدر جمعیۃ علماء ضلع غازی آبا، مولانا فاروق مظہراللہ قاسمی امام و خطیب شاہی جامع مسجد بھوگل، مولانا عبدالسبحان قاسمی صدر جمعیۃ علماء ضلع چاندنی چوک، یوسف بھائی چاندنی چوک، مولانا زاہد قاسمی صدر جمعیۃ علماء مشرقی دہلی ، قاری عبدالسمیع نائب صدر جمعیۃ علماء صوبہ دہلی ،قاری احرارالحق جوہر قاسمی ، مولانا ضیاء اللہ قاسمی ، قاری ہارون اسعدی ، مولانا محمود امینی، مولانا اخلاق قاسمی مصطفے آباد کے نام قابل ذکر ہیں ۔اس اجلاس میں اہم شرکاء کے نام حسب ذیل ہیں: مولانا شمیم احمد قاسمی امام وخطیب مدینہ مسجد جعفرآباد، قاری محمد عارف امام نرسری مسجد، مولانا اسلام الدین قاسمی ، شیخ علیم الدین اسعدی ، حافظ رشید احمد، قاری عبدالغفار مہتمم مدرسہ بیت العلوم ، وسیم صدیقی ، مولانا حسام الدین قاسمی ، مولانا اسجد قاسمی جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء غازی آباد، قاری فرمان، مولانا خلیل احمد قاسمی ، قاری شاہد قاسمی ، مولانا ڈاکٹر جاوید انور قاسمی ، مولانا افشاں قاسمی، مولانا حسین احمد قاسمی ، مولانا غیاـث الدین مظاہری ، مفتی بشیر احمد قاسمی ، مولانا غیو راحمد قاسمی ، مولانا مرشد، مولانا محمد اسلام نئی دہلی ، قاری محمد حسن، مولانا مسعود عالم قاسمی ، مفتی عبدالواحد قاسمی ، ثناء اللہ رحمانی ، مولانا دین محمد، ڈاکٹر ابومسعود، مفتی کفیل الرحمن قاسمی ، محمد طاہر بھائی لال کنواں ، مولانا ابراہیم ، قاری آزاد، مولانا یوسف قاسمی ، مفتی شکیل ، حاجی اسعد میاں ، مولانا قاسم نوری ، مولانا شفیق احمد قاسمی مالیگانوی ، مولانا محمد خالد قاسمی سمیت دہلی غازی آباد، او رمختلف علاقوں کے علماء ، ائمہ و ذمہ دارا ن مساجد اور اہم نمایندے کثیر تعداد میں موجود تھے ۔صدر جمعیۃ علماء ہند مولانا قاری محمد عثمان کی دعاء پر مجلس کا اختتام ہوا۔

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker