ہندوستان

موسم سرما میں گرم کپڑے تقسیم کرانا کارخیر بھی ہے اور انسانی فریضہ بھی: ناظم امارت شرعیہ

پٹنہ۔ ۱۴؍جنوری: (عادل فریدی) بہار میں کئی ہفتوں سے جاری سرد لہر اور برفانی ہوائوں کے چلنے سے عام زندگی کی رفتار سست پڑگئی ہے، محنت ومزدوری کرنے والے گرم کپڑوں کے نہ ہونے کی وجہ سے کافی پریشانی واضطراب کی زندگی بسر کرنے پر مجبور ہیں، جس کی وجہ سے انسانی صحت پر منفی اثرات پڑرہاہے ،سردی کے اس موسم میں امارت شرعیہ بہار،اڈیشہ وجھارکھنڈ نے محتاج وبے کس اور پریشان حال لوگوں کے درمیان ایک ہزار سے زائد کمبل تقسیم کامنصوبہ بنایااور اب تک امیر شریعت ،مفکراسلام حضرت مولانا محمد ولی رحمانی صاحب دامت برکاتہم کے حکم سے ناظم امارت شرعیہ مولانا انیس الرحمن قاسمی صاحب نے بہار کے مختلف اضلاع پٹنہ،گیا،مدہوبنی،دربھنگہ،سیتامڑھی،سیوان،ویشالی،کھگڑیا،سمستی پور،بیگوسرائے، چمپارن، رہتاس، بھاگل پور،مونگیر،ارریہ،پورنیہ،کشن گنج،مغربی چمپارن،مشرقی چمپارن،سوپول،کٹیہار کے علاوہ جھاکھنڈ کے جمشید پور، رانچی اورکوڈرماکے سرد علاقوں میں اپنے نمائندوں کے ذریعہ عمدہ قسم کے گرم کپڑے متاثرین تک پہونچوائے۔ناظم امارت شرعیہ مولانا انیس الرحمن قاسمی صاحب نے فرمایاکہ بے سہارا اور غریب خاندانوں کے درمیان خدمت خلق کے جذبے سے موسم سرما میں گرم کپڑے تقسیم کرانا کارخیر بھی ہے اور انسانی فریضہ بھی،اس سے اللہ کی رضا و خوشنودی حاصل ہوتی ہے، امارت شرعیہ ہرسال مصیبت وپریشان حال افراد کے درمیان کمبل تقسیم کرتی آرہی ہے اور اس سال بھی بڑے پیمانے پر تقسیم کررہی ہے، سیلاب زدہ علاقوں میں ٹھنڈک کی وجہ سے بڑی پریشانی بڑھ گئی ہے ،چھوٹے چھوٹے بچوں کی حالت قابل رحم ہے۔ اس لئے ملک کے اصحاب خیر حضرات اس کار خیر میںبڑھ چڑھ کر حصہ لیں اور امارت شرعیہ کے اس رفاہی کام میں دست تعاون بڑھائیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker