ہندوستان

قرآن پاک کی تعلیم و اشاعت قیامت تک کیلئےمسلمانوں کا فریضہ

دارالعلوم اسراریہ سنتوشپور میں مولانا اسرارالحق ،مفتی عرفان و دیگر علماء وائمہ کا خطاب
سنتوشپور۔۱۶؍جنوری: قرآن کریم ایک مستند کتاب ہدایت اور دستور زندگی ہے،اس کتاب کی تعلیم وتبلیغ پیغمبر اسلام کے بعد امت ِ مسلمہ کا مشن ہے،اللہ تعالیٰ نے نبی پاک ﷺکی زبانی فرمایا’’ میری طرف یہ قرآن وحی کیا گیا ہے تاکہ میں اس کے ذریعے سے تم کو آگاہ کروں اور وہ بھی جن کو یہ پہنچے‘‘۔ اس آیت کے مطابق قرآن کریم کی تبلیغ و تعلیم آپؐکے بعد قیامت تک اس امت کی ذمہ داری ہے ۔ان خیالات کا اظہار معروف عالم دین مولانا اسرارالحق قاسمی ایم پی نے حفظ و تجوید کے مشہور ادارہ دارالعلوم اسراریہ سنتوشپور میں منعقدہ پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔مولانا نے موجودہ حالات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہاکہ ملک میں برسراقتدار طاقتیں مختلف مسائل میں الجھاکر مسلمانوں کے آپسی اتحاد و اتفاق کو منتشر کرنے کی سازش میں مصروف ہیں جسے سمجھنے کی ضرورت ہے اور خاص طورسے تعلیم یافتہ و دانشور طبقہ کی ذمہ داری ہے کہ وہ خود بھی اس قسم کی سازشوں سے دور رہیں اور عام مسلمانوں کو بھی ان سے آگاہ کرتے رہیں ۔ دارالعلوم مالتی پور کے شیخ الحدیث مفتی عرفان الحق مظاہری نے اپنے تاثرات کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ دارالعلوم اسراریہ سنتوشپور کے تعلیمی وتربیتی نظام میں پہلے کے مقابلہ مزید بہتری آگئی ہے جسے دیکھ کر کافی مسرت ہوئی ،تعلیمی جائزہ کے دوران محسوس ہوا کہ یہاں بچوں کو تجوید کی رعایت کے ساتھ قرآن پاک حفظ کروانے کے علاوہ سنت کے مطابق زندگی گزارنے کی عملی تربیت بھی دی جاتی ہے تاکہ یہ طلباء آئندہ صحیح معنوں میں مسلمانوں کے درمیان تعلیم وتدریس کے ساتھ اصلاح و تبلیغ کاکام بھی کرسکیں۔ وارڈ گنج جامع مسجد کے خطیب و شیخ الحدیث مفتی معراج احمدنے کہا کہ مدرسہ میں مقیم پونے دوسوطلباء کے امتحان کے دورا ن ہمیں اندازہ ہوا کہ سبھی طلباء اچھی طرح حروف کی ادائیگی کے ساتھ قرآن پڑھتے ہیں،دوسری اہم چیز یہ ہے کہ یہاں کے طلباء کا آموختہ بھی نہایت پختہ اور ٹھوس ہے ،مجھے معلوم ہواکہ یہاں کے زیادہ تر اساتذہ گجرات کے تربیت یافتہ ہے جو یقیناً طلباء کے حق میں نہایت مفید ہے اور اس کا نمونہ بھی دیکھنے کا موقع ملا۔ مسجدابوبکرمارکوٹیس لین کے امام مولاناآصف ندوی نے کہا کہ اس مدرسے کی ایک اہم خصوصیت یہ بھی ہے کہ یہاں قرآن پاک کی معیاری تعلیم کے ساتھ عصری علوم جیسے انگلش ، ریاضی وغیرہ بھی پڑھائے جاتے ہیں۔ مسجد عبداللہ پیل خانہ ،ہوڑہ کے امام مفتی خورشید احمدنے کہا کہ قرآن پاک ایک انقلابی کتاب ہے اور بلا شبہ جس جگہ اس کتاب کی تعلیم و تدریس ہوتی ہے اس سے نہ صرف قرآن کی تعلیم حاصل کرنے والے خوش نصیب طلباء فائدہ اٹھاتے ہیں بلکہ گردوپیش کی آبادی پر بھی اس کے مثبت اثرات پڑتے ہیں،الحمدللہ دارالعلوم اسراریہ سنتوشپور کی نیک نامی دوردور تک پہنچ رہی ہے اور بہت قلیل مدت میں اس ادارے کو معیاری تعلیمی و تربیتی نظام کی وجہ سے شہرت و ہر دلعزیزی حاصل ہورہی ہے۔اس موقع پر مدرسہ کے مہتمم مولانا نوشیراحمد نے مدرسہ کی تعلیمی رپورٹ پیش کرتے ہوئے اطلاع دی کہ آئندہ مارچ کی15 ؍ تاریخ کو گزشتہ سال حفظ قرآن کی تکمیل کرنے والے 16؍بچوں کی دستار بندی کی جائے گی۔قبل ازاں مدرسہ میںششماہی امتحان کا انعقاد عمل میں آیا جس میں کامیابی حاصل کرنے والے طلباء کو مہمانوں کے ہاتھوں گراں قدر انعامات سے نوازا گیااور مولانا اسرارالحق قاسمی کے ذریعہ سترہ بچوں کا حفظ قرآن پاک شروع کروایا گیا۔دیگرممتحنین اورشرکاء میں ٹکیہ پاڑہ ہوڑہ کے امام مولانا محمد شاہنواز صدیقی اور مسجدسید اسماعیل لین کے امام مولانا محمد ساجد ندوی،حاجی حسنین اور اے ایم یو اولڈ بوائز کے جنرل سکریٹری انجینئر وقار احمد خان وغیرہ کے نام خاص طورسے قابل ذکرہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker