ہندوستان

بارکاؤنسل آف انڈیا کے خصوصی کمیٹی کے رکن کم ویریفیشن رول

کے کوسی کمشنری کے انچارج ڈاکٹر ششی ایس کیشور کادورہ کشن گنج
کشن گنج ۸فروری(محمد عظیم الدین) کشن گنج کے باراسوسی ایشن میں تشریف لائی اور تمام اراکین سے ملاقات کی۔انہوں نے کہا ودھان پریشد و راجیہ سبھا میں بھی وکلاء کو جگہ ملنی چاہئے۔یہاں پہونچنے پر باراسوسی ایشن کے اراکین نے انکا پرخیرمقدم کیا۔جناب ششی ایس کشورکی موجودگی میں ضلع باراسوسی ایشن کو بارکاؤنسل آف انڈیاکے زیر اھتمام سنئر ایڈوکیٹ منیرالحق کے ذریعہ۲لاکھ روپئے کا چیک فراہم کیا۔ اس موقع پر بارکاؤنسل آف انڈیاکے اسپیشل کمیٹی کے ممبر جناب کشور نے کہا کہ قومی و اسٹیٹ سالانہ بجٹ میں ایک فیصد خرچ وکیلوں کے لئے مقرر کیا جانا چاہئے،انہوں نے کہا کہ ایک وکیل کیا آمدنی روزآنہ نہیں کے برابر ہے وہیں دوسری جانب کسی وکیل کی آمدنی لاکھوں میں ہے۔سب سے زیادہ بے روزگار وکیلوں میں ہے۔ بجٹ میں مذکورہ انتظام نافذ ہونے سے وکیلوں کو فائدہ ملے گا اور انکی تحفظ ہوگی۔ساتھ انصاف کے امور میںبیلینس رہے گا اور عوام کو بھی فائدہ ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ جووکیل مختلف عدالتوں میں ۱۲سالوں سے زائدمدت تک وکالت کرچکے ہیںاڈوف جج بنایا جائے۔تبھی الگوچودھری اور جمن شیخ والا انصاف عام ہوگا۔ اس سے وکیلوں کی عزت میں اضافہ ہوگا۔وکیلوں میں مہاتماگاندھی ، پنڈت جواہرلال نہرو،سردار پٹیل کی روح بستی ہے۔جناب کشور نے ضلع باراسوسی ایشن کے وکیل اراکین سے کہا کہ کیس ڈائری لکھنے کے دوران پولس کو وکیلوں کی بھی لینی چاہئے،قانون میں ایسا انتظام ہونا چاہئے۔اس موقع پر ضلع بار اسوسی ایشن کے صدر نورالسہیل،سنئروکیل شیشیر کمار داس، سنئروکیل سرین پرساد ساہا، اسلم نوری، زبیر عالم، اجیت کمار داس، گاندھی لال سینگھ،جئے کشن کشواہا، سنجئے مودی، دھرم چندبیدھ،لعل محمد، چودھری خلیق الزماںسمیت متعدد وکیل موجود تھے۔

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker