مضامین ومقالات

سر زمین قندوز کے ننھنے شہیدو

داغ جگر:شمشیر حیدر قاسمیؔ

اےجنت کے حسین پھولو !۔اتنی جلدی بھی کیاتھی ۔ابھی تو تیرے نازک پنکھڑیاں اچھی طرح کھلے بھی نہیں تھے ،تم ہمیں داغ مفارقت دے گئے، ابھی تو ہم تمہاری خوشبوؤں سے معطر بھی ہونے نہ پائے تھے ۔اور تم نے جنت کے فضاؤں کو مشکبار کرنے کا عزم کر لیا، ہائے ہائے اعدائے اسلام کے خرمن پر برق تپاں بن کر ابھی تیرا گرنا تو باقی ہی تھا، تم نےجنت کے لئے رخت سفر باندھ لیا،
اے کاش ! تم نے ہم گنہگاروں کو بھی اپنے ساتھ لے لئے ہوتا، تاکہ جنت کی کیاریوں اور گملوں کو ہم تیرے لئے آراستہ کر دیتے،
واقعی تم تو بڑے خوددار نکلے، تمہیں اتنا بھی گوارا نہ ہوا کہ ہم جیسے گنہگار، دنیاوی زندگی کے حریص، اعدائے اسلام سے دوستی گانٹھنے والوں کو اپنے ساتھ رکھو،
کاش ہم خود تیری راہوں میں کیوں نہ حائل ہوگئے تاکہ تیرے نرم و نازک اور پاکیزہ جسموں پر گرنے والے گولے پہلے ہمارے جسموں کے پرخچے اڑادیتے تاکہ تمہارے صدقے میں ہماری بخشش ہو جاتی ۔
۔۔۔نہیں ،،،نہیں ،،،ہماری ایسی قسمت کہاں ؟ہمارے مقدر میں ساقی کوثر کا ایسا مہمان بننا کہاں ہے کہ خود ساقی کوثر ہمیں اپنے مقدس ہاتھوں سے جام کوثر عطا فرمائے ۔
کتنی خوش قسمت ہیں وہ مائیں جن کے پاکیزہ آغوش میں ان حسین و جمیل پھولوں کو نشو و نما ملا ۔
مبارک ہو میری مائیں، تمہیں ان جنتی پھولوں کا پرورش کرنا، مبارک ہو تمہیں،تیری آنکھوں کی ٹھنڈک کا شہید ہونا،
آج ترا نور نظر جنت کے دلکش، پرکیف اور حسین وادیوں میں محو رقص ہے،
رضوان تیرے لخت جگر کی ضیافت پر فخر محسوس کر رہا ہے ۔
جنت کی نازنینیں انھیں اپنے آغوش میں لے رکھیں ہیں ۔وہ انھیں جھوم جھوم کر لوریاں سنارہی ہیں ۔

اے قندوز کے مہمانان رسول !(صلی اللہ علیہ و سلم )
ہمیں معاف کردینا ۔۔۔۔۔یقینا تیرا مقدس لہو ہمیں مسلسل صدائیں دے رہا ۔کہ اٹھ اے مسلم خوابیدہ اٹھ ۔
اے سرزمین عرب کے حکمرانوں آنکھیں کھولو، 
اے ملت اسلامیہ کے قیادت کے دم بھرنے والو ! 
ذرا دیکھو تو سہی ۔
تیری بربادیوں کے ہورہے ہیں مشورے ۔
۔۔۔۔۔اب تو بیدار ہو جاؤ ۔۔خدارا غفلت کی چادر اب تار تار کر لو ۔چلا گیا ہے وقت تیرےسونے کا ۔ 
سنادو دنیا کو یہ پیغام کہ ۔ہم پھول بھی ہیں تلوار بھی ہیں ۔
مگر آہ ۔کیسی نیند طاری ہوگئی ۔جو ٹوٹنے کا نام ہی نہیں لے رہی ہے ۔
معاف کرنا ۔تیرا لہو پکارتا چلا جارہا ہے ۔اور ہمارے کانوں پر جوں تک نہیں رینگ رہا ہے ۔
آہ کہیں ایسا نہ ہو کہ ہماری بربادیوں کی داستاں تک نہ داستانوں میں ۔

(بصیرت فیچرس)

Tags

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker