مضامین ومقالاتمیزان بصیرت

حضرت مولانا محمد سالم قاسمیؒ کی حیات اور خدمات پر ایک شاندار پیشکش

نام کتاب: خطیب الاسلام حضرت مولانا محمد سالم قاسمیؒ ایک عہد ساز شخصیت
(بصیرت آن لائن کی خصوصی پیشکش)
مرتب: مولانا خان افسر قاسمی
صفحات: ۲۲۴۔ قیمت: ۲۰۰؍ روپئے۔
ناشر: رابطہ صحافت اسلامی ہند
تعارف وتبصرہ: شکیل رشید
شخصیات آتی ہیں او رجاتی ہیں کہ یہی اللہ کا قانون ہے، پر نہ ہر آنے والی شخصیت ’عہد ساز‘ کہلانے کی مستحق ہوتی ہے او رنہ ہی ہر جانے والی۔ ’عہد ساز شخصیات ‘ تو بس گنتی کی ہی ہوتی ہیں او رانہیں بھی ’عہد ساز‘ بننے کےلیے ایک طویل عرصہ لگتا ہے۔ بقول میر تقی میر
مت سہل ہمیں جانو پھر تاہے فلک برسوں
تب خاک کے پردے سے انسان نکلتے ہیں
’عہد ساز‘ وہ شخصیات ہوتی ہیں جو بیک وقت تین نسلوں کو اپنے خیالات، اپنے کمالات، اپنے علم وعمل اور اپنے کارناموں سے متا ثرکرتی ہیں۔ حضرت مولانا محمد سالم قاسمیؒ بلاشک وشبہ ایسی ہی شخصیات میں سے ایک تھے، اسی لیے اگر انہیں ’عہد ساز‘ کہا جائے تو کچھ بھی غلط نہیں ہے۔ حضرت مولانا سالم قاسمیؒ کا ہمارے درمیان سے اُٹھ جانا ایک عہد کا خاتمہ ہی کہلائے گا؛ ان کی باتیں ان کے کارنامے او رکمالات ہمیشہ یاد کیے جاتے رہیں گے۔ اور یاد کرنے کا ایک طریقہ ان کی شخصیت اور خدمات پر وقیع مضامین کی اشاعت بھی ہے، یہی کام ملک کے مشہور آن لائن پورٹل ’بصیرت آن لائن‘ نے کیا ہے۔
’بصیرت آن لائن‘ کی خصوصی پیشکش کا عنوان ہے ’خطیب الاسلام حضرت مولانا محمد سالم قاسمیؒ ایک عہد ساز شخصیت‘ ۔ اسے ’بصیرت میڈیا گروپ‘ کے نوجوان اور باصلاحت منیجنگ ڈائریکٹر مولانا خان افسر قاسمی نے مرتب کیا ہے، اس خصوصی پیشکش کے چیف ایڈیٹر مولانا غفران ساجد قاسمی ہیں جو ’بصیرت آن لائن ‘ پورٹل کے روح رواں ہیں۔ اس خصوصی پیشکش کو خوب سے خوب تر بنانے میں مذکورہ پورٹل کی پوری ٹیم ایڈیٹر مظفر احسن رحمانی، نیشنل بیورو چیف نازش ہما قاسمی، عمر عابدین قاسمی مدنی، محمد نافع عارفی،شہاب الدین صدیقی،ارشدفیضی،افتخاررحمانی،شارب ضیاء رحمانی اور ان کے ساتھ ٹیم کے دیگر کارکنان نے دن رات ایک کردئیے، اللہ رب العزت انہیں جزائے خیر دے۔ (آمین)۔
اس خصوصی پیشکش کا خیال کیوں آیا اور اس کی اشاعت کا مقصد کیا ہے اس تعلق سے ’عرض مرتب‘ میں مولانا خان افسر قاسمی تحریر کرتے ہیں کہ حضرت مولانا محمد سالم قاسمی ؒ کے انتقال کے بعد (۱۴؍اپریل ۲۰۱۸) ’’بصیرت آن لائن کو بے شمار مضامین ومقالات اور تعزیتی پیغامات وتاثرات موصول ہوئے اور بصیر ت آن لائن نیوز پورٹل نے ان مضامین ومقالات اور پیغامات وتاثرات کو ترجیحی طو رپر اہمیت کے ساتھ شائع کیا۔۔۔۔اسی دوران بعض احباب کا اصرار ہوا کہ کیوں نہ ان تمام مضامین ومقالات کو یکجا کرکے دستاویزی مجلہ کی شکل میں شائع کردیاجائے تاکہ آنے والی نسلوں کے لیے حضرت خطیب الاسلام ؒ کی حیات وخدمات، افکار ونظریات اور ان کی زندگی کے اہم گوشے مشعل راہ بن جائیں او رایک دنیا ان سے استفادہ کرکے اپنی دنیا بھی سنوار لے اور آخرت کو سنوارنے کا سلیقہ بھی سیکھ لے‘‘۔
یقیناً حضرت مولانا مرحومؒ کی حیات وخدمات کو اس طرح سے پیش کرنا کہ کوئی گوشہ نہ چھوٹ پائے آسان نہیں تھا مگر یہ کام ہوا اور بقول مرتب ’’حضرت خطیب الاسلام ؒکے نام کی برکت سے اللہ نے مجھے ہمت دی اور میں اس کام کو کرنے کے لائق ہوا‘‘۔
چیف ایڈیٹر مولانا غفران ساجد قاسمی ’نوائے بصیرت‘ کے عنوان سے اس خصوصی پیشکش کی تیاری اور اس کام میں درپیش مشکلات کو بڑی خوبصورتی سے پیش کرتے ہیں، وہ بجا طور پر تحریر کرتے ہیں ’’خطیب الاسلام حضرت مولانا محمد سالم قاسمیؒ کو دارفانی سے کوچ کیے ابھی ایک ماہ سے بھی کم کا عرصہ گزرا ہے اور اس قلیل مدت میں ’بصیرت میڈیا گروپ‘ نے اپنی کم مائیگی، اسباب ووسائل سے محرومی اور بے بضاعتی کے باوجود اس کار عظیم میں حصہ لے لیا اور یہ بات بھی تاریخ میں سنہرے حروف میںلکھی جائے گی کہ ’بصیرت آن لائن ‘ کو خطیب الاسلام حضرت مولانا محمد سالم قاسمیؒ کی حیات وخدمات پر مشتمل خصوصی شمارہ شائع کرنے میںاولیت حاصل رہی‘‘۔
وہ مزید لکھتے ہیں ’’خطیب الاسلام حضرت مولانا محمد سالم قاسمیؒ کی شخصیت اس دور میں یقیناً عہد ساز تھی، انہوں نے اپنے علوم ومعارف، افکار وآثار اور اپنے کرداروعمل سے ایک عہد کو متاثر کیا ہے اور ہندوستان کی اسلامی تاریخ میں سنہرے باب کا اضافہ کیا ہے‘‘۔
خصوصی پیشکش میں ۱۰؍پیغامات اور چھوٹے بڑے ۶۶ مضامین ومقالات شامل ہیں چند منظوم تعزیت نامے بھی ہیں۔ پیغامات دارالعلوم دیوبند، دارالعلوم وقف دیوبند، حضرت مولانا سید محمد ولی رحمانی، حضرت مولانا اسرارالحق قاسمی، ڈاکٹر ظہیر قاضی، مولانا برہان الدین قاسمی، مولاناپروفیسر شکیل قاسمی، مولانا ندیم الواجدی ، مولانا مفتی حذیفہ قاسمی، مولانا صغیر احمد نظامی اور راقم الحروف کی طرف سے ہیں۔ لکھنے وا لوں میں اکابر علمائے کرام شامل ہیں مثلاً حضرت مولانا سید محمد رابع حسنی ندوی، حضرت مولانا مفتی ابوالقاسم نعمانی، حضرت مولانا خالد سیف اللہ رحمانی، حضرت مولانا مفتی عزیزالرحمن فتحپوری وغیرہ وغیرہ۔
حالانکہ کسی عظیم شخصیت کے انتقال کے فوراً بعد لکھے جانے والے مضامین اکثر تاثراتی ہوتے ہیں مگر خصوصی پیشکش کے مضامین ومقالات تاثراتی ہونے کے ساتھ ساتھ قدرے علمی بھی ہیں اور حضرت مرحومؒ کی حیات وخدمات کے ساتھ ان کی علمی خدمات پر بھی کچھ حد تک روشنی ڈالتے ہیں۔ حضرت مولانا سید محمد رابع حسنی ندوی کا مضمون ’مولانا محمد سالم قاسمی حکیم الاسلام کے سچے جانشین‘ ایک تاثراتی مضمون ہے۔ مضمون حالانکہ مختصر ہے، ایک ہی صفحہ میں مگر مولانا مرحومؒ کی پوری شخصیت آنکھوں کے سامنے آجاتی ہے۔ یہ جملے ملاحظہ کریں: ’’اس برصغیر میں (حضرت مولانا محمد سالم قاسمیؒ کو) بڑی علمی دینی حیثیت سے شہرت حاصل تھی اور ان کے خطابات بہت توجہ او رپسندیدگی سے سنے جاتے تھے وہ اپنی خصوصیات میں اپنے عظیم والد حضرت مولانا قاری محمد طیب صاحب ؒ کے صحیح جانشین کی حیثیت سے پہنچانے جاتے تھے ۔ اور ان کو اپنی صفات وخصوصیات کی وجہ سے بلند مقامی حاصل تھی‘‘۔
مہتمم دارالعلوم وقف دیوبند حضرت مولانا محمد سفیان قاسمی نے اپنے مضمون ’موت العالم موت العالم‘ میں مولانا مرحوم کی پوری تصویر کھینچ کر رکھ دی ہے۔ اور کیوں نہ کھینچتے ، کہ یہ مولانا مرحوم کے صاحبزادے ہیں۔ مضامین تمام ہی اچھے ہیں اور حضرت مولانا مرحوم کی حیات وخدمات کے کئی گوشوں کو وا کرتے ہیں اس لیے انہیں پڑھا بھی جاناچاہئے ۔ یہ خصوصی پیشکش اس معنیٰ میں اہمیت رکھتی ہے کہ اس نے مولانا مرحوم کی حیات وخدمات کا ایک در کھولا ہے، ایک راستہ دکھایا ہے جس پر چل کر مولانا کی علمی خدمات کا مکمل تعارف کرایاجاسکتا ہے۔ اور سچ تو یہی ہے کہ مولانا مرحوم کی حیات وخدمات پر تاثراتی سے کہیں زیادہ علمی اور تحقیقی مضامین کی ضرورت ہے۔۔۔ضرورت ہے کہ انہوں نے جو کچھ لکھا ہے اسے عام کیاجائے اور یہ بتایا جائے کہ ’دین حق‘ کی ترویج کے لیے حضرت مرحومؒ نے کیسی کوششیں او رکاوشیں کیں۔ یہ کام ان شاء اللہ ہوگا۔۔۔اللہ’ بصیرت میڈیا گروپ ‘کو اس خصوصی پیشکش کی اشاعت کے لیے اجر عظیم دے اور اس خاص نمبر کو مقبول عام کرے۔ آمین) ۔کتاب حاصل کرنے کے لیے مرتب سے رابطہ: 9867001617
(بصیرت فیچرس)

Tags

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker