طارق فتح جیسے نفرت پھیلانے والے پاکستانی کو دہلی یونیورسٹی میں لکچرکے لئے بلانا شرمناک : ڈاکٹر ظفرالاسلام

طارق فتح جیسے نفرت پھیلانے والے پاکستانی کو دہلی یونیورسٹی میں لکچرکے لئے بلانا شرمناک : ڈاکٹر ظفرالاسلام

نئی دہلی:12؍ستمبر(بصیرت نیوزسروس)
دہلی اقلیتی کمیشن کے صدر ڈاکٹر ظفرالاسلام خان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ بھگوڑے پاکستانی طارق فتح کو دہلی یونیورسٹی کے ہنسراج کالج میں اسلام کا بھارتی کرن کے عنوان پربروز جمعرات تقریر کے لئے بلایاجانا ایک افسوس ناک بات ہے ۔ یہ لکچر آر ایس ایس کی ایک تنظیم انڈیا پالیسی فاؤنڈیشن منعقد کرا رہی ہے اور اس کی صدارت فیروز بخت احمد کر رہے ہیں۔ ڈاکٹر ظفرالاسلام نے کہا کہ طارق فتح جیسے کھلے ہوئے دشمن اسلام کو نفرت پھیلانے کے لئے پلیٹ فارم دینا ایک شرمناک واقعہ ہے جبکہ ایسے شخص کا ہندوستان میں داخلہ ہی ممنوع ہونا چاہئے۔ جھوٹ اور افترا پر مبنی اس کی تقریریں اور تحریریں اسلام اور مسلمانوں کے بارے میں جان بوجھ کر غلط فہمیاں پھیلاتی ہیں۔ ڈاکٹر ظفرالاسلام نے کہا کہ مذکورہ جلسے کی صدارت قبول کرکے فیروز بخت نے اپنے شاندار ماضی کو داغدار بنالیا ہے۔ اس داغ کو مٹانے میں انھیں برسوں لگ جائیں گے۔ اب بھی وقت ہے کہ وہ اس پروگرام سے خود کو الگ کرلیں۔ یادرہے کہ یہ پروگرام بروز جمعرات ۴ بجے دوپہر ہنس راج کالج نارتھ کیمپس میں منعقد ہورہاہے۔