ہندوستان

جنسی تعلقات قائم کرنے کے سلسلے میں سپریم کورٹ کا فیصلہ اخلاقی قدروں اور مشرقی روایات کے خلاف

یہ حرام کاری کو قانونی شکل دینے کی عدالتی کوشش ہے! سید محمد ولی رحمانی

نئی دہلی:28/ستمبر(بصیرت نیوز سروس)

شادی شدہ عورت سے اس کی رضا مندی کے ساتھ جنسی تعلقات قائم کرنے کو سپریم کورٹ کی جانب سے درست قرار دیا جانااخلاقی قدروں اور مشرقی روایات کے خلاف ہے- ابھی چند دن پہلے ہی ہم جنس پرستی کو جرم کے دائرے سے باہر کردیا گیا؛ اور اب یہ تازہ فیصلہ سامنے آیا ہے جس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ ہندوستان کو مغربی تہذیب و ثقافت کے رنگ میں رنگنے کی کوشش کی جارہی ہے- شادی شدہ عورت کے ساتھ جنسی تعلقات قائم کرنے کی اجازت دراصل حرام کاری کو قانونی شکل دینے کی عدالتی کوشش ہے جو کسی بھی طرح پسندیدہ قرار نہیں دی جاسکتی- ان خیالات کا اظہار آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے جنرل سکریٹری حضرت مولانا سید محمد ولی رحمانی نے اپنے ایک اخباری بیان میں فرمایا- سپریم.کورٹ کے حالیہ فیصلے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے یہ بھی کہا کہ شادی شدہ عورت کے ساتھ جنسی تعلق یا شادی شدہ مرد کا اپنی بیوی کے علاوہ کسی دوسری عورت سے تعلق قائم کرنا ہر مذہب میں جرم ہے؛ ایسی غلط چیز کو درست قرار دینا اور اسے قانونی جواز فراہم کرنا مناسب نہیں ہے- اس سے سماج میں سخت اخلاقی بحران پیدا ہوگا؛ خاندانی نظام کا تانا بانا بکھر جائے گا؛ ناجائز اولاد کی کثرت ہوگی؛ اور چند برسوں کے بعد مغربی ملکوں کی طرح ہمارے یہاں بھی ایسے بچوں کی ایک قابل لحاظ تعداد ہوگی جن کے لیے اپنے باپ کا نام بتانا مشکل ہوگا- ہمیں اس بات پر غور کرنا ہوگا کہ ہم اپنے ملک میں کون سا سماج چاہتے ہیں؛ حیا اور پاکدامنی والا سماج یا فحاشی و عرانیت والا سماج؟ حضرت مولانا سید محمد ولی رحمانی نے یہ بھی کہا کہ یہ کیسی عجیب بات ہے کہ لیو ان ریلیشن شپ؛ ہم جنسی اور شادی شدہ مردوں اور عورتوں کی جنسی بے راہ روی کو تو ہمارے ملک میں درست قرار دیا جارہا ہے لیکن ایک سے زیادہ نکاح کو عورت پر ظلم اور زیادتی سے تعبیر کیا جاتا ہے اور اس پر پابندی لگانے کی بات کہی جاتی ہے! بیوی کی موجودگی میں دوسری عورتوں کے ساتھ آزادانہ جنسی اختلاط عدالت عالیہ کی نظر میں درست ہے تو عزت اور احترام کے ساتھ کسی دوسری عورت کو بیوی کی حیثیت دینا اور اس کے حقوق ادا کرنا ظلم کیسے ہوسکتا ہے..؟

Tags
Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker