ہندوستان میں دارالقضاء کا قیام ضرورت و اہمیت کے موضوع پر لیکچر

ہندوستان میں دارالقضاء کا قیام ضرورت و اہمیت کے موضوع پر لیکچر

ممبئی:11؍اکتوبر(بصیرت نیوزسروس)
آئیے مسلم پرسنل لا سیکھیں کے عنوان سے سلسلہ محاضرات کا دسواں موضوع ہندوستان میں دارالقضاء کا قیام ضرورت و اہمیت ھے، اس موضوع پر حضرت مولانا مفتی صادق خان صاحب قاسمی قاضی شریعت دارالقضاء آل انڈیامسلم پرسنل لابورڈ میراروڈ مورخہ 14/اکتوبر 2018 روز اتوار کو بلال اسکول نزد بلواس ہوٹل مولانا شوکت علی روڈ گرانٹ روڈ ایسٹ ممبئی میں بعد نماز مغرب تفصیلی محاضرہ دیں گے، اس پروگرام کے کنوینر جناب مفتی قاضی محمد فیاض عالم قاسمی نے کہا کہ اس محاضرہ میں ہندوستان میں دارالقضاء کی اہمیت وضرورت پر تفصیلی گفتگو کی جائے گی، نیز یہ بھی بتایاجائےگا کہ ہندوستان کے حالات میں دارالقضاء کورٹ کا کس طرح معاون ومددگار ھے، اور اس کی شرعی اور قانونی حیثیت کیا ھے، اس پر تفصیلی روشنی ڈالی جائےگی، انھوں نے مزید کہا کہ خاندانی جھگڑوں کو دارالقضاؤں سے حل کرانے اور قاضی شریعت کی اطاعت کرنے کے دینی اور دنیاوی فائدے بھی بتائے جائیں گے۔ جناب مفتی محمد فیاض عالم قاسمی نے کہا کہ شریعت کی اصطلاح میں قاضی کس کو کہاجاتاھے، اور کس کا فیصلہ قابل عمل ہوتا ھے؟ اس پر بھی تفصیل سے کلام کیا جائے گا، قاضی صاحب نے مزید کہا کہ موضوع کی اہمیت کے پیش نظر محاضرہ کے لئے اس میدان کے ماہر جناب مفتی صادق خان صاحب کا ا نتجاب کیاگیا ھے، موصوف دارالقضاء میراروڈ کے قاضی ہیں اور اس موضوع کے نشیب وفراز سے اچھی طرح واقف ہیں، مفتی محمد فیاض عالم قاسمی قاضی شریعت دارالقضاء آل انڈیامسلم پرسنل لابورڈ ناگپاڑہ ممبئی نے عوام الناس اور اسکول وکالج کے طلبہ سے خصوصی طور شرکت کرنے کی درخواست کی، مزید تفصیلات کے لئے رابطہ کریں۔ 8080697348