مسلم دنیا

علی گڑھ مسلم یونیورسٹی المنائی ایسوسی ایشن قطرکی جنرل باڈی میٹنگ منعقد

دوحہ،قطر:13؍اکتوبر(بصیرت نیوزسروس)
علی گڑھ مسلم یونیورسیٹی المنائی ایسو سی ایشن قطر کے ایگزیکیٹیو محمد مشیر عالم نے دوحہ قطر سے یہ خبر دی کہ ایسو سی ایشن نے سال کا تیسرا المنائ گیٹ ٹوگیدر اور جنرل باڈی میٹنگ گذشتہ جمعرات ۱۱ اکتوبر کو میوزیم آف اسلامک آرٹ پارک دوحہ قطر میں منعقد کیاگیا، جس میں علی گڑھ مسلم یونیورسیٹی کے ۱۶۰ ابنائے قدیم نے حصہ لیا۔ اس موقع پر ہندوستان کے مختلف حصوں کے ان تمام لوگوں نے شرکت کی جن کا تعلق علی گڑھ یونیورسیٹی سے رہا ہے۔ تمام نئے ممبران کی بھی شمولیت ہوئی۔ صدر صاحب نے سالانہ بجٹ پر روشنی ڈالا اور درخواست کی کہ وہ تمام حضرات جنکا تعلق ہندستان میں علی گڑھ یونیورسیٹی سے رہا ہے اور وہ قطر میں مقیم ہیں اس ایسو سی ایشن میں شامل ہوں اور سر سید کے مشن کو صرف علی گڑھ اور ہندوستان میں ہی نہیں بلکہ دنیا کے تمام ممالک تک پہنچائیں۔
صدر محترم انجنئیرجاوید احمد کی صدارت میں پروگرام کا آغاز تلاوت کلام پاک سے شروع ہوا۔ سر سید احمد خان، علی گڑھ مسلم یونیورسیٹی کے تعلیمی مشن کے مختلف موضوعات پہ تبادلہ خیال ہوا۔ اور سر سید کے مشن کو آگے بڑھانے کے سلسلے میں کوششوں پہ گفتگو کی گئی۔ اس گفتگو میں جناب صدر جاوید احمد، محمد مشیر عالم، شاہد خان، قمر عالم، ضیاءالحق، ضیاءالدین احمد، محمد عالمگیر، ابو رضوان، شاد قیصر، عبدالکریم، شاہد پرویز، آصف خان،فیصل نسیم، اور عادل احمد شامل ہوئے اور اپنے مشوروں کے ذریعہ آگے کا لائحہ عمل تیار کیا۔
اس موقع سے آئندہ 17اکتوبر کو ہونے والے سر سید ڈے یعنی سر سید احمد خان کی یوم ولادت کی تیاریوں کا بھی جائزہ لیا گیا۔ اور تمام انتظامات کے سلسلے میں ایگزیکیٹو ممبران کے درمیان گفتگو ہوئی۔
اس موقع پہ ایک وقت کے کھانے کا بھی انتظام رکھا گیا ۔ جہاں تمام فیملی نے اپنے گھروں سے عمدہ لزیز پکوان کا انتظام کیا تھا۔ اس پروگرام کو ضیاءالحق، سرور مرزا،جاوید سلطان،دانش علی خان اور فرمان خان نے کورڈینیٹ کیا۔ وہیں خواتین کی طرف سے ڈاکٹر آشنا، مسز شادما،مسز زوبی نے پروگرام کو کورڈینیٹ کیا۔
جناب صدر محترم اور دیگر سنئیر حضرات کے ویژن نے بہت متاثر کیا۔ اللہ ان لوگوں کی حفاظت فرمائے جو ہمارے درسگاہ اور وہاں کے طلبہ کے لئے اتنی محبت رکھتے ہیں۔ سوال جواب کے سیشن کے دوران مختلف موضوعات پہ گفتگو ہوئی، جس میں خاص کر تنظیم کے قواعدوضوابط اور بائ لاج پہ تبادلہ خیال ہوا۔ جس میں قطر کے مقامی قوانین کے مطابق اور قطر کے اندر ہندوستانی سفارت خانہ کے مطابق چیزوں کو شامل کرنے کی تجویز پیش کی گئ۔ قطر کے اندر یونیورسیٹی کے پاس طلبہ کے لیئے روزگار کے مواقع فراہم کرنے کے سلسلے میں بھی تجویز رکھی گئی۔ قطر کے اندر آئندہ سال 2022 میں ہونے والے فیفا ورلڈکپ کو سپورٹ اور پرموٹ کرنے پر بھی اظہار خیال کیا گیا۔
اندھیرا دیر تک ٹکتا کہاں ہے * شرط یہ ہے کہ کوئ چراغ تو جلے
ہمیں فخر ہے کہ ہم ایک ایسے عظیم ا لشان ادارے کے طالب علم رہے جہاں ذرات کا بوسہ لینے کو فلک سے ستارے بھی زمیں پہ اتر آتے ہیں۔اپنے وطن سے، اپنے ماں باپ بیوی بچوں سے سینکڑوں میل دور یہاں اپنوں کے درمیان وقت گزارنا بہت جذباتی تجربہ رہا۔ ان خوبصورت حسین لمحوں نے سبھی لوگوں کو بہت مسرور کیا۔میرے پاس الفاظ کا اتنا بڑا ذخیرہ نہیں کہ اس خوبصورت محفل کی ہو بہو منظر کشی کر سکوں۔ میں رب کائنات سے دعاگو ہوں، اللہ تعالیٰ ہم تمامی لوگوں کو دین و دنیاں کی تمام خوشی و کامیابی عطا فرمائے۔ آمین۔ ساتھ ہی سر سید ڈے کی کامیابی کے لیئے بھی دعاءکی گئی۔

Tags

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker