وہ کون ایسے ممالک ہیں جو ہر بچے کو پیدائش پر شہریت دے دیتے ہیں؟

وہ کون ایسے ممالک ہیں جو ہر بچے کو پیدائش پر شہریت دے دیتے ہیں؟

واشنگٹن:یکم نومبر(بی این ایس؍ایجنسیاں)
صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ امریکی سرزمین پر پیدا ہونے والے کسی بچے کو خودبہ خود امریکی شہریت نہیں ملنا چاہیے کیوں کہ ایسا صرف امریکا میں ہوتا ہے، مگر آئیے حقائق جانتے ہیں۔امریکا میں وسط مدتی انتخابات سے چند ہی روز قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مطالبہ کیا ہے کہ امریکی سرزمین میں پیدا ہونے والے کسی بھی بچے کو خود بہ خود امریکی شہریت کا اہل قرار دینے سے متعلق ضوابط تبدیل ہونا چاہییں۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ اس انداز کا ضابطہ امریکا کے علاوہ کہیں رائج نہیں ہے۔ ضوابط کے مطابق امریکی سرزمین پر پیدا ہونے والا وہ بچہ بھی امریکی شہری ہے، جس کے والدین امریکی شہری نہ ہوں اور وہ بھی جس کے والدین غیرقانونی طور پر امریکا میں مقیم ہوں۔صدر ٹرمپ امریکی عوام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا، ’آپ کا ملک دنیا کا واحد ملک ہیں، جہاں کوئی شخص آتا ہے اور اس کا یہاں ایک بچہ پیدا ہوتا ہے اور وہ بچہ امریکی شہری ہوتا ہے۔‘‘
امریکی صدر کا یہ دعویٰ اپنی جگہ مگر حقیقت یہ ہے کہ اپنی سرزمین پر پیدا ہونے والے کسی بچے کو شہریت دینے کے اعتبار سے امریکا دنیا کا واحد ملک نہیں بلکہ ایسے متعدد ممالک ہیں۔ قانونِ سرزمین (Law of Soil) کے تحت اپنی سرحدی حدود کے اندر پیدا ہونے والے کسی بچے کو غیرمشروط اور غیرمحدود طور پر شہریت کا حق دیا جاتا ہے۔
امریکی دستور کی چودھویں ترمیم کی ایک ضمنی شقت میں یہ شہریت کا حق امریکی سرزمین پر پیدا ہونے والے ہر بچے کو تفویض کیا گیا ہے۔
یہ بات اہم ہے کہ حقِ سرزمین کا قانون، حقِ خون (Law of blood) یعنی شہریت کے حامل والدین سے بچے کو شہریت منتقل ہونے کے قانون سے مختلف ہے۔امریکا کے علاوہ دنیا کے 29 ممالک میں یہ حق اپنی سرزمین پر پیدا ہونے والے ہر بچے کو حاصل ہے۔ ان میں انٹیگووا، بربودا، ارجنٹائن، باربادوس، بیلیز، برازیل، کینیڈا، چاڈ، چلی، کیوبا، ڈومینکا، ایکواڈور، ایل سیلواڈور، فیجی، گیرنادا، گوئٹے مالا، گیانا، ہنڈورس، جمیکا، لیسوتھو، میکسیکو، پاکستان، پاناما، پیراگوئے، پیرو، سیٹ کیٹس اور نیویس، سیٹ لوئسیا، سیٹ وینکینٹ، یوراگوئے اور وینیزویلا شامل ہیں۔
یہ تمام ممالک یا تو وہ ہیں، جن کے ہاں نظام قانون برطانوی کامن لا سے ماخذ ہے، جو حق سرزمین کے تحت شہریت دینے کا آغاز ہوا یا وہ جو مختلف ممالک کے لوگوں کو اپنی جانب متوجہ کرنے کے لیے یہ حق دیتے آئے ہیں۔