جہان بصیرتفکرامروز

بہار اسمبلی الیکشن : مسلمانوں کی دانشمندی کا امتحان

مظفراحسن رحمانی
ڈیگ بھرتا 2015 بہاراسمبلی الیکشن اب آپ کے گھر میں قدم رکھنے کو بے تاب ہے ,یہ الیکشن آپ کے لئے سب سے زیادہ اہمیت کے حامل اس لئے ہیکہ تمام سیاسی پارٹیوں کی نظر آپ پر ٹکی ہوئی ہے ,آپ اس ملک میں حصہ دار ہیں کرایہ دار نہیں آپ کے اسلاف کا خون اس زمین میں دفن ہے , جس کی لالی نے اسے آج تک توانا رکھا ہے ,آپ کی قیمت کا احسا س آپ کے دشمنوں کو خوب ہے , یہی وجہ ہیکہ اس ملک کو ہندو راشٹر بنانے کا خواب والے سیاسی جماعتوں نے بھی آپ پر ڈورے ڈالنے کے ساتھ فاصلوں کو کم کرتے ہوئے قربتوں کو بڑھانا شروع کردیا ہے ,براہ راست ان خونی پنجوں کو آپ سے ہاتھ ملانے کی تو ہمت نہیں ہوگی ,لیکن جو لوگ کچھ دنوں قبل آپ کے بڑے بہی خواہ تھے ,آپ کو وزیر اعلٰی بنانے کی بات کررہے تھے ,آپ سے ہمدردی جتانے کیلئے اپنے ایک اہم عہدے سے ایک موقع پر مستعفی ہوچکے ہیں, اب وہ چولا بدل کر اور آپ سے ہمدردی کی بڑی بڑی باتیں کر کے آپ کو لبھانے کی کوشس کرینگے ,لیکن آپ ان سے ہرگز اپنے ضمیر کے سودا کرنے کے لئے تیار نہیں ہونگے,آپ اس سلف کے خلف ہیں جن کی ٹھو کروں میں قیصرو کسری کے محلات رہتے تھے ,جنہوں نے پوری بنی نوع انسانیت کو یہ پیغام دیا کہ ہم وہ قوم جو اپنی فراست ایمانی سے مک کوزیروزبر کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں, اور ربع مسکون عالم پر ہماری حکومت رہی ہے ,سیکولرزم کی بقا کی ذمہ آپ پر اور صرف آپ پر ہے , تھوڑا بھی قدم متزلزل ہوا تو سیکولرزم کی اینٹ زمین پر آگرے گی ,اور اسی اینٹ سے ہمارے مقبرے کو مزین کیا جائے گا یاد رکھنے کی بات یہ ہیکہ سیکولرزم میں رفقا کی ہمدردی ,رشتہ داروں کا خیال ,تعلقات کی سلامتی کے لئے ووٹ نہیں ڈالے جاتے ہیں ,بلکہ اس طرح کی فکر حرام کے درجے میں ہے ,وہ اس لئے کہ آپ کا ایک قیمتی ووٹ جو آپ نے تعلق کی بنیاد پر اس پارٹی کو دیا ہوگا جو مسلمانوں کے خون سے ہولی کھیلنے کے عادی ہونگے تو اس کی وجہ بہنوں کی عصمتیں نیلام ہونگی ,قوم کا بچہ یتیم ہوگا ,دلہنوں کے سہاگ اجڑیں گے ,نوجوان نسلوں کا جنازہ اٹھے گا, بوڑھی ماؤں کا سہارا ٹوٹ جائیگا ,ضعیف اور کمرخمیدہ والد کا وہ سپنا جو سالو ں سے بن کر رکھا تھا تارتار ہوجائیگا,ایک شخص کے مفاد کی خاطر ملک جلے ,مکان اجڑے,کاروبار تباہ کیا جائے ,کھیت اور کھلیان تک تاراج کیا جائے , نسلوں کو تباہ کیا جائے میں سمجھتا ہوں آپ کو آپ کی شریعت اس کی اجاز ت نہیں دیگی ,پھر کیا ضروری ہے کہ آپ ہی سودائی ہوں آپ کی ہی قیمت لگے ,منڈی میں بھاؤ لگے ,اور اس کے لئے امت ذلیل ہو ,خدارا ایسا نہ کریں ورنہ “تمہاری داستاں تک بھی نہ ہوگی داستا نوں میں” اس وقت ایک مداری ڈگڈگی لئے 14/ماہ کے ایک طویل عر صے کے بعد پھر سے آپ کے گاؤں میں چکر کاٹنے لگا ہے,چھوٹے وعدوں کو پھر سے دوہرا رہا ہے,آپ کی قیمت پوچھتا ہے , اور پھر بڑھ کر دام لگا کر چلاجاتا ہے اور عقل کی ماری قوم چلانے لگتی ہے, مودی ,مودی ,مودی ,مودی ,عقل ماری گئی یا پھر ہماری درگت کے دن قریب آگئے , یہ یاد رکھنے کی بات ہے کہ آپ کا جس صوبہ سے تعلق ہے وہ بیر ,بہادروں کا صوبہ ہے ,اسی زمین نے ابوالمحاسن مولانا سجاد صاحب ,مولانا علی مونگیری ,مولانا منت اللہ رحمانی ً,مولانا قاضی مجاہدالاسلام قاسمی ,جیسے پر عزم اور باحوصلہ قائدوں کو جنم دیا ,جس کے نام سے سیاسی ایوانوں میں زلزلہ پیدا ہوجاتا تھا ,جنہوں نے نہ کبھی ضمیر کا سودا کیا اور نہ ہونے دیا , ملک کی سلامتی اور بقا کے لئے جان کو ہتھیلیوں پر لے کر میدان کارزار میں کود گئے ,اپنی جان کو جوکھم میں ڈال کر امت کے آبرو کی حفاظت کیا۔
یقینا یہ بات قابل افسوس ہے کہ ہم میں بعض وہ لوگ کود پڑے ہیں,جو لوگوں کے سامنے اس حیثیت سے آتے ہیں کہ وہ ملک کیکسی بڑی تنظیم کے ممبر ہیں اور کارکن ہیں اور مسلم سیاسی رہنماؤں کو دام فریب میں لاکر پریس کانفرنس کے ذریعہ یہ باور کرانے کی کوشس کرتے ہیں کہ اب اس مرحوم امت کا اکلوتا وہی قائد ہے ,جب کہ ہر وہ شخص جس کو تھوڑا بہت بھی سیاسی شعور ہے وہ یہ خوب جانتے ہیں کہ اسرائیل کی میٹنگ میں شریک ہونے والا شخص کیا مودی کا ایجنٹ نہیں ہوسکتا , اس وقت بہار کا الکشن اس لئے بھی اہم ہوگیا ہے کہ اسی راہ سے مداری یوپی کو ناپے گا۔ مسلمانوں کی فہم و فراست کا امتحان ہر اس وقت لیا گیا ہے جب جب اس ملک عزیز پر زعفرانی رنگ گہرا ہواہے , ہم نے بڑھ کر اس کی آستین کو نیچا کیا ہے , یہ ایسی گھڑی ہے کہ پرانے رقیبوں نے فسطائی طاقتوں کو منھ کی کھانے کے لئے ہاتھ ملائے ہیں, تاریخ اس بات کو کبھی فراموش نہیں کریگی ,اور اگر آپ نے تھوڑی بھی بھول کی تو تاریخ آپ کو کبھی معاف نہیں کرے گی۔
(مضمون نگار بصیرت میڈیا گروپ کے ایڈیٹر ہیں)

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker