مسلم دنیا

افغانستان: خودکش حملے میں 30؍افرادہلاک،50؍زخمی

اسلام آباد:23؍نومبر(بی این ایس)
افغانستان میں کیے گئے ایک اور خودکش حملے میں تیس کے قریب ہلاکتیں ہوئی ہیں۔ اس حملے سے قبل اکیس نومبر کو کیے گئے خودکش حملے میں پچاس سے زائد ہلاکتیں ہوئی تھیں۔مشرقی افغانستان میں ایک خودکش بمبار نے 23 نومبر بروز جمعہ نماز کے دورانِ ایک مسجد میں داخل ہو کر خود کو دھماکے سے اڑا دیا۔ مسجد افغان فوج کے ایک مقامی بیس میں واقع ہے۔ اس واقعے میں کم از کم ستائیس افراد ہلاک اور دیگر ستاون زخمی ہو گئے۔ صوبائی حکومت کے ترجمان نے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔
ہلاک اور زخمی ہونے والے تقریباً سبھی سکیورٹی اہلکار ہیں۔ خوست صوبے میں تعینات ایک فوجی ترجمان نے بھی تصدیق کی ہے کہ ہلاک ہونے والے تمام افراد کا تعلق افغان سکیورٹی فورسز سے تھا۔ حکومتی اور سیاسی حلقے رواں ہفتے کو افغانستان کے لیے انتہائی خونی اور اندوہناک قرار دے رہے ہیں۔
مقامی حکام کے مطابق یہ واقعہ خوست صوبے کے اسماعیل خیل ضلعے کی ایک مسجد میں پیش آیا۔ اسماعیل خیل کا ضلع دہشت گرد حقانی نیٹ ورک کے مقامی گڑھ کے انتہائی قریب واقع ہے۔سکیورٹی ذرائع ایسے امکانات کا بھی اظہار کر رہے ہیں کہ مسجد میں دھماکے کے لیے ریموٹ کنٹرول بم کا استعمال کیا گیا ہے۔
فی الحال کسی گروپ یا تنظیم نے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے، تاہم افغانستان میں حالیہ کچھ عرصے میں طالبان کی جانب سے سکیورٹی فورسز پر حملوں میں تیزی دیکھی گئی ہے لیکن اُس نے مذہبی اجتماع پر حملوں کی تردید کی ہے۔ جہادی گروپ ’اسلامک اسٹیٹ‘ بھی کئی خودکش حملوں میں ملوث پایا گیا ہے۔
دوسری جانب افغانستان کے کئی شہروں میں جمعے کی نماز کے بعد عوامی مظاہرے کیے گئے۔ ان مظاہرین نے مختلف شہروں کی اہم سڑکوں کو رکاوٹوں سے بند بھی کیا۔ یہ لوگ جبل السراج نامی ضلع میں مغربی دفاعی اتحاد کے مبینہ فضائی حملے میں ہونے والی ہلاکتوں کے خلاف احتجاج کر رہے تھے۔ اس حملے میں تین شہریوں کی ہلاکت ہوئی تھی۔ نیٹو کے امریکی ترجمان نے واضح کیا ہے کہ جبل السراج کے حملے میں نیٹو یا امریکی جنگی جہاز ملوث نہیں تھے۔

Tags

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker