جہان بصیرتفکرامروز

بہاراسمبلی الیکشن:دنیاتو بے وفا تھی مگر تم کو کیا ہوا

مظفراحسن رحمانی
میر قاسم اور میر جعفر کا نام تاریخ کے پنوں میں جب جب پڑھا طبیعت میں ہیجانی کیفیت پیدا ہوتی رہی سوچتا تھا کہ انسانوں کی جماعت میں غدار کیسے پیدا ہوتے ہیں جو تھوڑے بہت مفاد کی خاطر ملک وملت کا بڑانقصان کرجاتے ہیں,آج جب یہ پڑھاکہ سماج وادی پارٹی کے سربراہ ملائم سنگھ یادو نے یہ کہتے ہوئے عظیم اتحاد سے علاحدگی اختیار کرلی کہ سیٹوں کی تقسیم میں ہم سے مشورہ نہیں کیاگیا ,تو چونک گیا کہ ہر زمانے میں ایسے لوگ پیدا ہوتے رہے ہیں, جومعمولی مفاد کے لئے کسی بھی حد کو پار کرنے کے لئے تیار رہتے ہیں, ملائم سنگھ جی یاد رکھئے تاریخ آپ جیسے لوگوں کو کبھی معاف نہیں کرے گی ,ویسے آپ جس ذہنیت کے پروردہ ہیں اس سے ہمیشہ ایسی امید رہی ہے ,وہ معمولی معمولی باتوں میں بڑے سے بڑے احسانات کوفراموش کرجاتے ہیں,ہمیں یادہے گذشتہ پارلیمانی الیکشنمیں مدھوبنی پارلیمانی حلقہ سے راشٹریہ جنتا دل کے امیدوار قد آور رہنما عبدالباری صدیقی ہوتے تھے ,ان کا سخت مقابلہ بی جے پی کے حکم دیو نارائن سے تھا ,سیاسی تجزیہ نگاروں کو اس بات کی پوری امید تھی کہ یہاں مسلم اور سیکو لر یادو برادری کی بڑی تعداد ہے ,اس لئے عبدالباری صدیقی کی کامیابی طے ہے ,لیکن سورج نے اپنی جلتی آنکھوں سے دن کے اجالے میں دیکھا کہ عبدالباری صدیقی کو ہار کامنھ دیکھنا پڑا اس لئے کہ یادو برادری سے حکم دیو کا تعلق تھا,اگرچہ کہ وہ بی جے پی کے نمائندہ تھے ,لیکن سیکولر ذہنیت نے بھی یہ کہ کر ووٹ کیا کہ ہم اپنی برادری کوووٹ دیں گے اور کچھ ایسا ہی ہوا یہاں یادو برادری کے عظیم رہنما لالو یادو کا بھی اثرکام نہیں آیااور اگر ہم یہاں یہ کہدیں کہ لالو پرسادکے عین منشا کے مطابق ہوا تو شاید غلط نہ ہو,یہ تو مسلمانوں کی ہی ایک ایسی جماعت ہے جس نے دھوکے کا سہارا نہیں لیا اگرمسلمان دھوکہ اور دغا سے کام لیتے تو 15/سالوں تک بہار میں یادو کی حکومت نہیں ہوتی ,ملائم سنگھ یادو کو سوچنا چاہئے تھا کہ عظیم اتحادکی بات آئی تھی تو اس کی سربراہی کا کام آپ نے ہی کیا تھا ,اور نریندرمودی کے وزیر اعظم ہونے کی بوکھلاہٹ میں آپ نے کیا کچھ نہیں کیا,ابھی گذشتہ دنوں جب آپ نے نریندر مودی سے ملاقات کیا تو سیاسی گلیاری میں یہ بات بہت تیزی سے گشت کرنے لگی تھی کہ کچھ تو ہے جس کی پردہ داری ہے ,سیاست دھوکے اور احسان نا شناسی کا نام نہیں ہے ,آپ کو سوچنا چاہئے تھا ک آپ کی حکومت یوپی میں اس لئے لوٹ آئی کہ مسلمانوں نے آپ کے ساتھ وفا کیا ,ورنہ بیٹے کے وزیر اعلٰی بنا نے کا خواب کبھی شرمندہ تعبیر نہیں ہوتا ۔
بہار سے عظیم اتحاد کے خلاف آپ کا الیکشنمیں آناکتنا سود مند ہوگا یہ آپ کو پتہ ہے ,لیکن اس سے بڑا فائدہ بی جے پی کو ضرور ہوگا , کہ خود کو سیکولر کہنے والے وہ لوگ جنہیں لالو پرسادد اور نتیش کمار سے ذاتی بنیاد پر کسی طرح کی ناراضگی ہوگی وہ آپ کو ووٹ کرینگے,اور یادو برادری کے وہ لوگ جو بی جے پی کو پسند کرتے ہیں بی جے پی کے بجائے سماج وادی کو ووٹ کرینگے ,برادری کا حق بھی ادا ہوگیا اور بی جے پی کو فائدہ بھی ہو جا ئیگا ,کیا خوب کیا آپ نے یہ بھی خیال نہیں کیا کہ سما ج وادی کو بدنام کرنے کیلئے مظفر نگر جلایا گیا ,وہا ں کی سڑکوں کو لہو لہو کیا گیا ,گلی کوچوں میں آج بھی آگ کے شعلے بھڑک رہے ہیں, بستی سے معصوم بچوں کی چیخیں آج بھی سنائی دی جارہی ہے , بوڑھی ماؤں کی سسکیاں راکھوں سے آج بھی سنائی دے گی , کمر خمیدہ بوڑھا باپ آج بھی اس انتظار میں ہے کہ شام ڈھلتے ہی بیٹا دوائی لے کر بازار سے لوٹ جائیگا, کتنے دن گذ رے ہیں ملائم یادو جی ان باتوں ذہن پر زور ڈالئے شاید آپ کی یادداشت آپ کے کام آجا ئے اور شام تک آپ کی گھرواپسی ہوجائے, اس لئے کہ صبح کا بھولا اگر شام کو واپس آجائے تو اس کو بھولا نہیں کہتے ہیں۔ ویسے یہ بات بھی یاد رکھنے کی ہے کہ نتیش بابو نے جو بہار کے لوگوں کو پیار اور دنیا میں عزت دیا ہے اس حوالے سے اب بہاری باہر کے لوگوں کو گھاس نہیں ڈالنے والے ہیں,ابھی ملک کے وزیر اعظم جنہیں جھو ٹ بولنے پر ید طولٰی حاصل ہے بہار کے چارادھیکار ریلیوں سے دھواں دھار بھاشن کرکے گئے ہیں ,ایسا لگتا ہیکہ ملک کا سارا خزانہ بہار کے غریبوں کے درمیان لٹا کر چلے جائنگے , انداز بھی کیسا جیسے کسی جنگ میں ہارے ہوئے سپاہیوں کے درمیان ایک فاتح بولی لگا کر اس کی قیمت کا پتہ لگاتا ہو ,آج ملک کے بچہ بچہ کو اس بات کا پتہ چل گیا ہے کہ وہ آدمی جو 100/دنوں میں کالا دھن واپس کرنے ہر غریب کے کھاتے میں پندرہ لاکھ روپے دیئے جانے اور مہنگائی پر کنٹرول کرنے پر بات کرنے والا وزیر اعظم 420/ دن کی تکمیل پر بھی چارسو بیسی کرنے کے سوا کچھ نہیں کرسکا ,۔
اس لئے بہار کے لوگوں نے یہ طے کرلیاہے کہ باہر سے ہر آنے والوں کو اپنی منھ کھانی پڑے گی , چا ہے وہ ملائم سنگھ یادو ہوں, یا پھر مسلمانوں کے ابھرتے بے باک نوجوان قائد اسدالدین اویسی ہوں, ان کی قدر اور ان کے کارناموں کو سلام ہے لیکن بی جے پی کو شکست دینے کے لئے ابھی تمام بہاریوں کا ایک ہی مشن ہے کہ ہم پورے اتحاد کے ساتھ عظیم اتحاد کو کامیاب بناکر فسطائی طاقتوں کو زیر دیں اور بہار کے عظیم سپوت نتیش بابو کو اقتدار میں لائیں اس لئے ملائم یادو جی آپ کا اپنی قوم میں افتراق پیدا کرنا کام نہیں آئیگا تاریخ کو دوبارہ غلطی دوہرانے پر مجبور نہ کیا جائے , ًملک کی عزت وآبرو اور سیکو لرز م کی حفا ظت کیجئے اسی میں ملک کا بھلا ہے ۔
(مضمون نگار بصیرت میڈیا گروپ کے ایڈیٹر ہیں، رابطہ نمبر 09431402672)

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker