مضامین ومقالات

اعلیٰ ذات کو دس فیصد ریزرویشن

اقتدار پانے کی مودی کی ٹھگ نیتی
تحریر : لالو پرساد یادو
ترجمہ: نازش ہما قاسمی
ساتھیوں جیسا کہ آپ جانتے ہیں کہ مودی سرکار نے اعلیٰ ذات کو معاشی طور پر دس فیصد ریزرویشن دینے کا اعلان کیا ہے اور اس تعلق سے لوک سبھا میں بل پاس بھی ہوچکا ہے اور راجیہ سبھا میں پاس ہونا ہے اس کے بعد صدرجمہوریہ کی منظوری سے یہ قانون بن جائے گا۔
مودی شاہ اور بی جے پی جہاں اسے تاریخی قرار دے رہے ہیں وہیں درباری میڈیا اسے مودی کا ماسٹر اسٹراک بتا رہے ہیں۔ ارون جیٹلی، اسمرتی ایرانی سمیت دیگر بی جے پی کے وزرا، ایم ایل اے اور سوشل میڈیا ٹرول جم کر اس کا پرچار کرنے میں لگے ہیں لیکن سچائی کچھ اور ہی ہے۔ دوستو دھیان سے پڑھئے گا خاص کر اعلیٰ ذاتیوں کے بھائی مودی شاہ اور بی جے پی نے جان بوجھ کر ایسے شرط عائد کیے ہیں جس میں ۹۵ فیصد آبادی آجائے گی۔آپ خود سوچیں آٹھ لاکھ تک کمانے والے لوگ معاشی طور پھر کمزوروں کی فہرست میں رکھے گئے ہیں مطلب ۶۵۰۰۰ روپیہ ہر ماہ کمانے والا معاشی طور پر کمزور ماناگیا ہے اب اعلیٰ ذات کے غریب بھائیوں آپ خود سوچیں ۶۵ ہزار کمانے والا کمزور ہوگا؟ پانچ لاکھ سے اوپر کمانے والے سے سرکار ٹیکس لیتے ہی اور آٹھ لاکھ کمانے والے کو معاشی طو رپر کمزور مانتی ہے۔۔۔ہے نہ جھول۔۔۔۔!
ایسا کیوں کیاگیا۔۔۔۔؟ کیو ںکہ اس ریزرویشن کے جھنجھنے سے ۹۵ فیصد لوگوں کاووٹ مودی حاصل کرلیں گے اور بدلے میں کیا دیں گے؟ اس کی کوئی گیارنٹی نہیں ہے۔۔۔۔۔آئیے اب گفتگو کرتے ہیں کہ اس ریزرویشن سے ہمارے اعلیٰ ذات کے بھائیوں کو اصل میں کیا ملے گا؟
سبھی جانتے ہیں کہ ریزرویشن ملنے کے دو فائدے ہوتے ہیں۔
۰۱) عمر کی قید میں تین سال کی چھوٹ۔
(۲) کسی بھی مخصوص امتحان میں کٹ آف نمبر کی رعایت۔
اس کے سوا کچھ نہیں ملتا ریزرویشن سے۔ آپ اپنے آس پاس کے ریزرویشن پانے والوں سے پوچھ سکتے ہیں اب اہم سوال یہ ہے کہ آپ کو ریزرویشن کا لالچ دے کر ووٹ لے لیا اور تین سال تک کوئی اسامی نہیں نکلی تو ریزرویشن کا کیا اچار ڈالیں گے؟ آپ کی عمر کی قید تو ختم ، آپ نے مودی سرکار کے پانچ سالوں میں کتنی اسامیاں نکلتے دیکھی ہیں۔ ایس ایس جی ثی جی ایل، ایس ایس جی ایچ ایس ایل ریلوے کی کتنی اسامیاں نکلیں؟ کتنے لوگوں کو تقرری نامہ دیا گیا، تو ریزرویشن کیاپکوڑے تلنے میں ملیں گے۔
اور سب سے اہم بات یہ ہے کہ جب آپ ریزرویشن لیں گے تو آپ جنرل کے پچاس فیصد سیٹ کےلیے نہیں بلکہ صرف دس فیصد سیٹ کےلیے فائٹ کریں گے اب سوچئیے اس دس فیصد سیٹ میں ۹۵ فیصد لوگوں کا فائٹ ہوگا جبکہ بچے ۴۰ میں صرف پانچ فیصد لوگوں کا فائٹ ہوگا تو آپ سوچئیے کسی مخصوص امتحان میں کٹ آف کس میں ہائی جائے گا؟ دس فیصد سیٹ کے لیے ۹۵ فیصد لوگوں کی فائٹ میں کہ ۴۰ فیصد سیٹ کےلیے پانچ فیصد لوگوں کی فائٹ میں۔۔۔۔۔؟
اس لیے میرے اعلیٰ ذات کے بھائیوں زیادہ خوش ہونے کی ضرورت نہیں ہے کہ یہ نریندر مودی کا بنا ہوا مایا جال ہے۔ مودی کسی سے نہ پیار کرتا ہے نہ کسی کے بارے میں سوچتا ہے وہ صرف کرسی پر کیسے بنا رہے اسی کے بارے میں سوچتا ہے اور اسی کے بارے میں جیتا ہے اسلیے میں کہتا ہوں کہ یہ دس فیصد ریزرویشن اقتدار پانے کی مودی کی ٹھگ نیتی ہے۔ ہوشیار رہیں۔۔۔!
آپ کا لالو پرساد یادو
(بصیرت فیچرس)

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker