شخصیاتمضامین ومقالاتہندوستان

فقیہ ملت حضرت مولانا زبیر احمد قاسمی کا انتقال، علمی دنیا کے لئے بڑا سانحہ

سیتامڑھی:13/جنوری(بی این ایس)
ہندوستان کے نامور عالم دین فقیہ ملت حضرت مولانا زبیر احمد قاسمی سرپرست وسابق ناظم الجامعتہ العربیہ اشرف العلوم کنہواں سیتامڑھی بہار کے طویل علالت کے بعد آج 13 جنوری 2019ء , بروز اتوارصبح سات بجےاپنےآبائ گاؤں چندرسین پور ضلع مدھوبنی بہار میں 82سال کی عمر میں انتقال کرگئے ,انا للہ وانا الیہ راجعون
انکے انتقال کی خبر پر مدرسہ مصباح العلوم ہرپوروا عالم نگر باجپٹی سیتامڑھی میں ایک تعزیتی نشست منعقد ہوئی جس میں طلباء واساتذہ نے قرآن پاک پڑھ کر دعائیں مغفرت کی اس موقع پر حضرت مولانا محمد صدرعالم نعمانی صدر جمیعت علماء سیتامڑھی نےحضرت رحمتہ اللہ علیہ کے حیات وخدمات پر مختصر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حضرت مولانا ساٹھ سال سے زیادہ عرصہ تک احادیث کی خدمت انجام دی ہیں , فراغت کے بعد1373 ھ سے تدریس کا آغاز کیا جوچند ماہ قبل تک جاری تھا آغاز مدرسہ بشارت العلوم کھرایاں پتھرا ضلع دربھنگہ مدرسہ اسلامیہ مغلاکھار ضلع نوادہ جامعہ رحمانی مونگیرجامعہ عربیہ مفتاح العلوم مئو یوپی درالعلوم سبیل السلام حیدرآباد الجامعتہ العربیہ اشرف العلوم کنہواں سیتامڑھی بہار جہاں تقریباً 25سال تک مختلف عہدوں صدرمدرس شیخ الجامعہ اورناظم اعلی رہے ہیں اور جامعہ کو تعلیمی وتعمیری اعتبار سے خوب پروان چڑھایاہے آپ کی نظامت و سرپرستی میں جامعہ اشرف العلوم کنہواں کاکامیاب ترین تاریخی صدسالہ اجلاس ہوا آپ نےاپنی بے پناہ انتظامی صلاحیت سےاشرف العلوم کنہواں کو ترقی کےبام عروج پر پہنچایا۔حضرت کی حق گوئی اور بے باکی بے مثال تھی جوحق سمجھتے ,برملا اظہار کرتے اس سلسلے میں کسی مصلحت , یا کسی شخصیت کی پرواہ نہیں کرتے تھے۔افسوس کہ ان کے انتقال سے ایسا خلا پید اہوگیاہے ،جو مستقبل قریب میں شاید پُر نہ ہواللہ سے دعاءہے کہ حضرت کو کروٹ کروٹ جنت نصیب فرمائے اور پسماندگان کو صبر جمیل عطا فرماے آمین

Tags

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker