اسلامیاترمضان وعیدینطب وسائنسمضامین ومقالات

بحالی صحت کے لیے روزہ رکھنا انتہائی مفید

جرمن ریسرچ:15/جنوری(بی این ایس)
جرمنی میں بحالی صحت کے لیے روزے کے بارے میں ایک اہم تحقیق کے نتائج میں بتایا گیا ہے کہ روزہ رکھنا انسانی صحت کے لیے انتہائی مفید ہے۔ بحالی صحت کے لیے روزہ موٹاپے سمیت کئی دائمی امراض کے علاج میں معاون ہوتا ہے۔
اس روزے سے مراد یہ ہے کہ انسان صحت کی بحالی کے لیے کسی پرسکون جگہ پر مکمل آرام کرے اور اس دوران پانی کے علاوہ دیگر خوراک ترک کر دے۔
اپنی نوعیت کے اب تک کے سب سے جامع اور سائنسی تحقیقی جائزے میں چودہ سو سے زائد افراد نے حصہ لیا۔ صحت سے متعلق موقر سمجھے جانے والے ’پلوس ون‘ جریدے میں شائع ہونے والی اس رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ قریب ڈیڑھ ہزار افراد نے جرمنی کے جنوبی علاقے میں واقع کونسٹانس جھیل کے قریب ایک کلینک میں پانچ سے لے کر بیس دن تک بحالی صحت کے لیے روزے رکھے۔
یہ تحقیق کونسٹانس کے معروف بوخینگر کلینک اور برلن یونیورسٹی ہسپتال کے تعاون سے کی گئی تھی۔ اوٹو بوخینگر غذا کے ذریعے علاج کرنے کے جرمن طریقہ کار کے بانی سمجھے جاتے ہیں۔
روزے کے فوائد
ان افراد کا جائزہ لینے والے طبی محققین نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ روزہ رکھنے والے افراد کی صحت پر متعدد مثبت اثرات مرتب ہوئے۔ رپورٹ کے مطابق روزے کے دوران انسانی جسم گلوکوز کے ذریعے توانائی حاصل کرنے کی بجائے جسم میں موجود چکنائی یا چربیلے مادے کو استعمال میں لاتا ہے۔
علاوہ ازیں روزے داروں کا وزن بھی کم ہوا یوں یہ موٹاپے کے علاج کے لیے موزوں طریقہ قرار دیا گیا۔ اس کے علاوہ تحقیقی رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا کہ بحالی صحت کے لیے روزہ رکھنے والے افراد کے معدے کا سائز بھی کم ہوا اور کولیسٹرول کے درجے میں بھی کمی واقع ہوئی۔
بحالی صحت روزہ پروگرام میں شامل افراد کا بلڈ پریشر بھی نارمل ہوا اور خون میں گلوکوز کی مقدار بھی بہتر ہوئی۔ ماہرین نے اپنے جائزے میں یہ بھی بتایا کہ روزہ رکھنا امراض قلب سے بچاؤ کے علاوہ شوگر اور ہائپر ٹینش کے مریضوں کے علاج میں بھی معاون ثابت ہوتا ہے۔
دائمی امراض
اس تحقیقی مطالعے کے نتائج میں یہ بھی دیکھا گیا ہے کہ بحالی صحت کے لیے روزہ رکھنا کئی دائمی امراض کے علاج میں بھی معاون ثابت ہو سکتا ہے۔ مثال کے طور پر جائزے میں شریک 84 فیصد افراد میں آرتھرائٹس (جوڑوں کا درد) خون میں چکنائی کی زیادہ مقدار اور جگر کی سوزش جیسے دائمی امراض میں بہتری دیکھی گئی۔ اس کے علاوہ 93 فیصد افراد نے بتایا کہ بحالی صحت کے لیے روزہ رکھنے کے دوران انہیں بھوک محسوس نہیں ہوئی۔
منفی اثرات
ڈاکٹروں نے اس دوران جائزے میں شریک افراد پر مرتب ہونے والے منفی اثرات کا جائزہ بھی لیا۔ اس دوران تاہم صرف چند شرکا میں روزہ رکھنے کے پہلے تین روز کے دوران سر درد اور بے خوابی جیسے منفی اثرات دیکھے گئے۔
ذیابیطس سے محفوظ رہنا ممکن ہے
زیادہ وزن خطرناک ہے
وزن کی زیادتی یقینی طور پر ایک خطرناک علامت ہے۔ اگر آپ کا وزن بہت زیادہ ہے تو پھر آپ ذیابیطس کی راہ پر بیٹھے ہوئے ہیں۔
ذیابیطس سے محفوظ رہنا ممکن ہے
ذیابیطس کی پانچ اقسام بتائی جاتی ہیں۔ اس کی ایک قسم ’ذیابیطُس ٹائپ ٹو‘ سے بچاؤ آسان ہے۔ بنیادی اصولوں پر عمل پیرا ہونے سے صحت مند رہا جا سکتا ہے۔

Tags

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker