جہان بصیرتخبردرخبر

اردو صحافت کا درخشندہ ستارہ : ڈاکٹر فاضل حسین پرویز

مشہور و معروف صحافی جناب ڈاکٹر فاضل حسین پرویز صاحب سے ملاقات کی مختصر روداد

اردو صحافت کا درخشندہ ستارہ:ڈاکٹر فاضل حسین پرویز

خبردرخبر :

غلام مصطفی عدیل قاسمی

ایسوسی ایٹ ایڈیٹر بصیرت آن لائن

بڑے صرف عمر مین بڑے نہیں ہوتے بلکہ تجربات و مشاہدات میں بھی بڑے ہوتے ہیں، کیونکہ زندگی کے جن مراحل سے ہم گزر رہے ہوتے ہیں یا مستقبل میں جن نشیب و فراز کا سامنا ہم کرنے والے ہوتے ہیں وہ ان تجربہ گاہ کو سر کر چکے ہوتے ہیں، اس لیے ہمیشہ میری کوشش و خواہش رہی ہے کہ اپنے بڑوں اور سینئرز کی خدمت میں حاضر ہوا کروں اور ان کے پاس کچھ پل گزار کر اپنے مستقبل کی راہ ہموار کر سکوں، بس اسی سلسلے میں گزشتہ روز دکن کی مشہور شخصیت اور اردو صحافت کا معروف چہرہ محترم ڈاکٹر فاضل حسین پرویز  (ایڈیٹر گواہ ویکلی) سے ملاقات ہوئی، ڈاکٹر صاحب کو آٹھ سال کی عمر سے پڑھتا آ رہا ہوں اب تک صرف پروگراموں میں سرسری سی ملاقات رہی ہر چند کہ کوشش رہی کہ تفصیلی بات چیت و صلاح و مشورے کے لیے ان کی خدمت میں حاضری دی جائے لیکن درسیات کی مشغولیت ہمیشہ مانع بن کر کھڑی رہی، لیکن کرم فرما مولانا غفران ساجد قاسمی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن و چیئرمین بصیرت میڈیا گروپ کی حیدرآباد آمد اور ڈاکٹر صاحب سے ان کی ملاقات کی خواہش نے اس مانع کو ختم کر دیا۔۔ اور پھر ہم ڈاکٹر صاحب کے تجربات سے کافی دیر تک آگاہ ہوتے رہے، یہ میرے لیے نیک فال ہے کہ دوران گفتگو کئی موقع پر میرا موقف اور میری سوچ ڈاکٹر صاحب کی فکر و نظر سے میل کھاتی نظر آئی، فاضل صاحب نہ صرف ایک کہنہ مشق قلم کار ہیں بلکہ امت کے سچے مصلح بھی واقع ہوئے ہیں جس کے نمونے نہ صرف انکی تحریر میں دیکھنے کو ملتے ہیں بلکہ ان کے کردار پر بھی اس کے نقوش نمایاں ہیں، نیک دل، صاف شبیہ اور حق گوئی ڈاکٹر صاحب کی شخصیت کے نمایاں پہلو ہیں، یہی وجہ ہے کہ صحافتی زندگی کا چلہ مکمل ہونے کو ہے لیکن ہند و بیرون ہند میں کوئی فرد نہیں جن کا ڈاکٹر صاحب سے کسی طرح کا کوئی جھگڑا یا کوئی لفڑا ہو، یہ اس بات کا بین ثبوت ہے کہ چالیس سالہ صحافتی زندگی میں بلکہ معاشرتی زندگی میں بھی ڈاکٹر فاضل حسین کا چہرہ بے داغ اور صاف ہے، جس کی وجہ یہ ہے کہ وہ جو بات بھی کہتے ہیں یا لکھتے ہیں بالکل خیرخواہی کے پہلو کو سامنے رکھ کر کہتے اور لکھتے ہیں، اور یہی ہونا بھی چاہیے کہ مقصد صرف دروازہ کھٹکھٹانا ہو نہ کہ دروازہ توڑنا؛ فاضل صاحب کی اس ایک عادت نے بھی لڑکپن سے میرے دل پر گہرے نقوش چھوڑے ہیں،

ڈاکٹر صاحب جہاں ایک بے باک اور باکمال صحافی ہیں وہیں دینی مزاج کے بھی حامل ہیں چنانچہ “گواہ ویکلی” کی ہی آفس میں نماز گاہ بھی ہے جہاں سارے اسٹاف اور ملاقات کے لیے آنے والے اشخاص کے ہمراہ باجماعت نماز کا اہتمام کیا جاتا ہے، دوران ملاقات ہم نے بھی عصر اور مغرب کی نماز باجماعت ادا کی، نوجوان نسل اور  صحافیوں کو ڈاکٹر صاحب کے عمل سے سبق لینی چاہیے کہ ہم جس لائن میں بھی ہوں ہم اسے کس طرح اسلامائزیشن میں ڈھال سکیں! دین اسلام کے اندر بے انتہا توسع ہے، اسلام یہ ہرگز نہیں کہتا کہ آپ دنیا داری سے مکمل کنارہ کشی اختیار کر لو کیونکہ اسلام رہبانیت کو بالکل بھی پسند نہیں کرتا بلکہ قرآن کریم میں تو یہ بھی کہا گیا ہے ((ولا تنس نصیبك من الدنيا)) لیکن وہیں اسلام اس بات کی تعلیم ضرور دیتا ہے کہ ہم اپنے مقصد تخلیق اور رضائے الٰہی کو بالکل فراموش نہ کر دیں،

انسانی زندگی کا کوئی ایسا شعبہ نہیں ہے جہاں اسلام ہماری رہنمائی نہ کرتا ہو، تو اسلامی تعلیمات کا تقاضا یہ ہے کہ ہم جس لائن میں بھی ہوں وہاں اسلامی پہلوؤں کو تلاش کریں اور پھر اسے عمل میں لائیں، اس طرح ہماری دنیا و عقبی دونوں سنور جائیں گی، اللہ پاک ہمیں عمل کی توفیق بخشے۔ آمین

ہفت روزہ گواہ کی آفس میڈیا پلس میں جدید سہولیات سے آراستہ عظیم الشان دو آڈیٹوریم ہیں جو الحمدللہ شہر حیدرآباد میں علمی، ادبی اور ثقافتی سرگرمیوں کے فروغ کا اہم ذریعہ بن رہے ہیں، ڈاکٹر صاحب کی ایک اور خصلت جس نے مجھے ان کا گرویدہ بنا لیا جو کہ آج کل لوگوں میں خال خال ہی نظر آتی ہیں وہ ہے نوجوان صحافیوں کو ہر طرح سے گائیڈ کرنے اور رہبری کرنا، ان کی ہمیشہ سے خواہش اور عادت رہی ہے کہ وہ نئی پیڑھی کو آگے بڑھنے کے لیے خیر خواہانہ مشورے دیتے رہتے ہیں، چنانچہ ڈاکٹر صاحب نے ہمیں بھی اپنے قیمتی مشوروں سے نوازا۔

خیر ڈاکٹر فاضل حسین صاحب کی چالیس سالہ صحافتی خدمات نئی نسل کے لیے مشعل راہ ہے، صوفیاء چلہ کشی کو بڑی اہمیت دیتے ہیں بلکہ اہل علم جانتے ہیں کہ خود تخلیق انسانی کے مراحل میں بھی چلہ کا اہم رول ہے، دعا ہے کہ صحافتی چلہ بھی ڈاکٹر صاحب کے لیے بھی نیک فال لے کر نمودار ہو۔

اللہ پاک فاضل صاحب کی اس عظیم خدمات کو شرف قبولیت بخشے۔ آمین

(بصیرت فیچرس)

gulammustafa9059@gmail.com

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker