ہندوستان

حضرت مولانا محمد قاسم صاحب اللہ والے اور بڑی با فیض شخصیت کے مالک تھے : حضرت امیرشریعت

حضرت مولانا محمد قاسم رحمۃ اللہ علیہ کو جامعہ رحمانی اور خانقاہ رحمانی سے بڑا گہرا تعلق تھا

مونگیر : 29 جنوری (پریس ریلیز)

ملک کے مشہور عالم دین اور مدرسہ شمس الہدی پٹنہ کے سابق شیخ الحدیث حضرت مولانا محمد قاسم صاحب رحمۃ اللہ علیہ صدر جمعیۃ علمائے بہار سوموار کو رات کے آخری پہر میں اپنے مالک حقیقی سے جا ملے، اناللہ وانا الیہ راجعون.

خانقاہ رحمانی مونگیر کے سجادہ نشیں امیرشریعت مفکر اسلام حضرت مولانا سید محمد ولی رحمانی صاحب نے ان کے انتقال پر شدید رنج و غم کا اظہار کیا ہے، انہوں نے فرمایا کہ حضرت مولانا محمد قاسم صاحب، ذی علم، اللہ والے اور بڑی بافیض شخصیت کے مالک تھے، ان کے ذریعہ اللہ کے بہت سے بندے دیندار بنے، بہتوں نے دین کا علم حاصل کیا اور عالم و فاضل بنے، بہار کے بہتر سے حصوں میں ان کا فیضان پہونچا خاص طور پر پٹنہ شہر کے لوگوں نے آپ کے علم، تقویٰ و طہارت سے بڑا فائدہ اٹھایا، پٹنہ کے لوگوں کے دل میں آپ کی بڑی محبت اور قدر و منزلت تھی، حضرت مرحوم نہ صرف مدرسہ اسلامیہ شمس الہدی کے پر وقار پرنسپل رہے بلکہ مدرسہ مدنیہ سبل پور پٹنہ کے ذریعہ دین کی قابل لحاظ خدمت کی، یہ جیتا جاگتا ادارہ حضرت مرحوم کی زندہ یادگار اور صدقہ جاریہ ہے، اب ایسی قابل قدر شخصیتوں سے صوبہ بہار خالی ہوتا جا رہا ہے، اللہ تعالیٰ ان کے حسنات کو قبول فرمائے، مدارج بلند کرے اور اعلیٰ علیین میں جگہ دے آمین.

حضرت مولانا کا جامعہ رحمانی اور خانقاہ رحمانی سے گہرا تعلق تھا، وہ اکثر اپنے اہل خانہ کے ساتھ یہاں تشریف لاتے اور فیضیاب ہوتے، حضرت مولانا اپنے برادران مولانا محمد سالم صاحب ،اور مولانا محمد ناظم صاحب قاسمی کو بھی اپنے ساتھ کبھی کبھی خانقاہ لیکر آتے اور ہمیشہ ان لوگوں کو خانقاہ رحمانی سے فیضیاب ہونے کی تاکید کرتے، انہیں حضرت امیرشریعت مولانا منت اللہ صاحب رحمانی رحمۃ اللہ علیہ سے بڑی عقیدت و محبت تھی.

جامعہ رحمانی میں حضرت مولانا محمد قاسم صاحب کے انتقال کی خبر صبح صادق کے وقت پہونچی جس سے جامعہ رحمانی خانقاہ مونگیر کا پورا ماحول سوگوار ہوگیا، فجر کی نماز کے بعد اساتذہ و طلبہ نے ان کے لیے اہتمام کے ساتھ پہلے ختم قرآن اور ایصال ثواب کیا پھر تعلیم میں مشغول ہوئے، اس موقع پر جامعہ رحمانی کے اساتذہ نے ان کی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا، جس میں جامعہ رحمانی کے طلبہ، اساتذہ، منتظمین، کارکنان اور خانقاہ رحمانی کے واردین و صادرین نے شرکت کی.

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker